Mian Manzoor Ahmad Wattoo pays tribute to Shaheed Zulfiqar Ali Bhutto

IMG_20150105_123535 Mian Manzoor Ahmad Wattoo, President Punjab PPP, observed the birthday anniversary of Shaheed Zulfiqar Ali Bhutto with simplicity as per the decision of the Party at Model Town Secretariat here today along with office bearers and workers. In the cake cutting function Tanvir Ashraf Kaira, Secretary General, Sohail Milk, Faiza Malik MPA, Jahan Ara Wattoo, Head of Social Media, Shahida Jabeen, Bushra Malik, Yasmeen Farooq, Jehanzaib Barki, Javed Akhtar, Manzoor Maneka, Abid Siddiqui, Khalid But, Dr. Bangish and PPP workers were present. Mian Manzoor Ahmed Wattoo paid rich tributes to Shaheed Zulfiqar Ali Bhutto who made labor, farmers, workers, harries and have-nots conscious of their rights and also how to get these from the elite who were an embodiment of their exploitation. He added that Zulfiqar Ali Bhutto granted the people of Pakistan right of vote on the basis of adult franchise for the first time and now parliamentarians were directly elected by them unlike in the past when they were elected by the BD members or councilors who constituted the Electoral College. He said that the PPP had been advocating the elimination of terrorists by taking them head on because force was the only language they understood as civility was devoid of them. He stated that the entire political leadership had come to the same conclusion which was the vindication of the standpoint of the Chairman Bilawal Bhutto and the PPP. The Chairman held that terrorists were neither human beings, nor Pakistani or Muslims and they must be exterminated without fail by defeating them on their turf. He said that Shaheed Zulfiqar Ali Bhutto gave constitution to the nation that had secured the federation of the country despite many ups and downs since then. He strongly condemned the attack of misguided miscreants who attacked the people and the media who were gathered in Lahore to show their respect to Salman Taseer. He demanded the Punjab Government that the culprits must be apprehended for exemplary punishment. It was not difficult to arrest them because they could be identified easily from the TV footage, he said. It will be a test case, he maintained. While replying to a question, Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that the PPP agreed to the establishment of military courts as the only mechanism to root out terrorism form the country adding there were only for the period of two years and would be dealing with the cases of terrorism referred by the federal government.

پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے آج یہاں پارٹی کی اعلیٰ قیادت کے فیصلے کے مطابق شہید ذوالفقار علی بھٹو کی یوم پیدائش کی تقریب پارٹی کارکنوں کے ہمراہ ماڈل ٹائون سیکریٹریٹ میں انتہائی سادگی سے منائی جسمیں سیکریٹری جنرل تنویر اشرف کائرہ، سہیل ملک، فائزہ ملک (ایم پی اے)، جہاں آراء وٹو، شاہدہ جبین، بشراء ملک، یسین فاروق، جہانگزیب برکی، یاسمین فاروق، جاوید اختر، منظور مانیکا، عابد صدیقی، خالد بٹ اور ڈاکٹر بنگش بھی موجود تھے۔ اس موقع پر میڈیا سے باتیں کرتے ہوئے میاں منظور احمد وٹو نے شہید ذوالفقار علی بھٹو کو اور انکی طرز سیاست کو زبردست خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے غریبوں، مزدوروں، ہاریوں، کسانوں، ریڑھی والوں اور ٹانگے والوں کو شعور دیا اور انکو آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر اپنے حقوق حاصل کرنے کے قابل بنایا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو نے عام آدمی کو پاکستان میں پہلی دفعہ حق بالغ رائے دہی کا حق دیا جسکے تحت اسوقت سے لے کر آج تک وہ اسمبلی کے ممبران براہ راست منختب کرتے ہیں جبکہ اس سے پہلے ان کا انتخاب بی ڈی ممبرز یا کونسلر کرتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ آج تمام قومی سیاست پیپلز پارٹی اور چیئرمین بلاول بھٹو کے دہشتگردی اور انتہاء پسندی کے خاتمے کے موقف کی تائید کرتی ہے جسمیں چیئرمین نے کہا کہ تھا کہ ان دہشتگردوں کو صرف طاقت سے ہی ختم کیا جاسکتاہے کیونکہ یہ مخلوق شائستگی اور انسانیت کی اقدار سے عاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہید ذوالفقا ر علی بھٹو نے پاکستانی قوم کو 1973؁ء کا آئین دیا جو کہ آج تک وفاق پاکستان کی ضمانت ہے۔ انہوں نے کل لبرٹی چوک میں سلمان تاثیر کی برسی کے موقع پر شرپسندوں کی ہنگامہ آرائی کی سخت مذمت کی جنہوں نے شمعیں روشن کرنیوالے اور میڈیا کے لوگوں کے ساتھ بد تمیزی کی۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ شر پسندوں کو قرار واقعی سزا دی جائے جنکو گرفتار کرنا مشکل نہیں ہے کیونکہ ٹی وی فوٹیج سے انکی بآسانی شناخت ہو سکتی ہے۔ ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے اور کو چیئرمین آصف علی زرداری نے فوجی عدالتوں کے قیام کی اس لیے حمایت کی ہے تا کہ دہشتگردی کا قلع قمع کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ یہ عدالتیں صرف 2 سال کے لیے ہیں اور ان میں صرف اور صرف دہشتگردی کے مقدمات ہی چلیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں