Mian Manzoor Ahmed Wattoo says people are fed up with this government

wattoo-terms-military-courts-as-right-step-to-deal-with-terrorists-1420901440-6228
This government is proving itself as an utter disappointment for the people who are fed up with them and now wishing their early retirement because they simply cannot deliver, said Mian Manzoor Ahmed Wattoo, President PPP Central Punjab in a statement issued from here today.

He recalled that the PML (N) leadership boasted during the election campaign that they would get the country out of the crisis of electricity load shedding within months because their experts had already chalked out a comprehensive plan in this regard. They lied to the people simply to come to power, and now they are punishing them oblivious of their revenge that may be inflicted sooner than later, he predicted.

He pointed out that the prevailing petrol crisis was beyond comprehension and the top government functionaries were heavily engaged in passing on the buck to each other instead of contemplating to overcome it. The conspiracy theory is not going to bail them out of the culpability of the crisis, he added.

He said that the Prime Minister was responsible for the crisis because under the cabinet system of democratic government it was the Prime Minister who was responsible under the narrative of cabinet government based on collective responsibility.

He argued that it was not good enough to make a few bureaucrats as sacrificial goats while the real culprits remained there to create more crises with the intention of squeezing the masses dry.

He said that the national life had been crippled for the last two weeks as a result of the non-availability of petrol and the contradictory statements of Ministers to tackle the crisis tantamount to rubbing the salt into the wound of the people.

He expressed the apprehension that the supply of fuel oil was also in jeopardy because its late shipment would seriously disrupt the thermal power generation and the country might experience a total black out in the near future as a result

The crash in the international market of oil prices should have been a source of comfort for the people instead of causing them to continue to face unmitigated miseries with more intensity.

پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے آج یہاں سے جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ موجودہ حکومت عوام کے لیے دن بدن ناقابل برداشت مایوسی کا باعث بن رہی ہے کیونکہ وہ انکے مسائل کو حل کرنے کی بجائے انکے لیے مزید مسائل پیدا کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومتی پارٹی انتخابی مہم کے دوران لوگوں کو سبز باغ دکھاتی رہی اور دعویٰ کیا کہ انکے ماہرین کے پاس بجلی کے بحران کو مہینوں میں حل کرنیکا جامع روڈ میپ تیار ہے لیکن اب یہ حقیقت عیاں ہے کہ انہوں نے لوگوں سے ووٹ لینے کی خاطر جھوٹ بولا کیونکہ ڈیڑھ سال بعد بھی یہ بحران سنگین شکل اختیار کر گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اب لوگوں پر مصائب کے پہاڑ کھڑے کر کے انکو سزا دے رہی ہے لیکن اسے یہ نہیں بھولنا چاہیے کہ لوگ جلد انتقام لے سکتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ پٹرول کے بحران نے پچھلے 2 ہفتوں سے قومی زندگی کو مفلوج کر رکھا ہے لیکن افسوس کہ حکومتی اکابرین اس کو حل کرنیکی بجائے اسکا ایکدوسرے کو ذمہ دار ٹھہرانے پر زیادہ مصروف دکھاتی دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سازش کا دقیانوسی نسخہ حکومت کو اس بحران کی ذمہ داری سے بیل آؤٹ نہیں کر سکتا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم اس بحران کے کلی ذمہ دار ہیں کیونکہ پارلیمانی طرز جمہوریت میں تمام اچھے اور برے کاموں کی کابینہ کی مشترکہ ذمہ داری ہوتی ہے جسکا سربراہ وزیراعظم ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ سرکاری افسران کو قربانی کا بکرا بنانے سے کام نہیں چلے گا جب تک صحیح مجرموں پر ہاتھ نہیں ڈالا جاتا اور وہ اب بھی غریب لوگوں کا خون چوسنے کے لیے براجمان ہیں۔ انہوں نے بجلی کے بحران کی سنگینی کا اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ کوئی بعید نہیں کہ آئندہ کچھ دنوں میں سارے ملک میں بلیک آؤٹ ہو کیونکہ بجلی پیدا کرنے والا فرنس آئل کا بحران پیدا ہونے کو ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں آدھی سے بھی زیادہ گرنے سے پاکستانی عوام کے لیے خاطر خواہ ریلیف کا باعث ہونا چاہیے تھیں لیکن حکومت کی بد انتظامی کی انتہاء ہے کہ لوگوں کو ریلیف کی بجائے تکلیف دی جار ہی ہے۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں