مسلم لیگ (ن) میں شامل ہونے والے ڈیڑھ سال پہلے ہی پیپلز پارٹی چھوڑ چکے تھے،قمر زمان کائرہ

پی پی 9 ق لیگ کے 2ارکان اسمبلی آخری تنخواہ اور مراعات لینے کے بعد ن لیگ میں شامل
پی پی 9 ق لیگ کے 2ارکان اسمبلی آخری تنخواہ اور مراعات لینے کے بعد ن لیگ میں شامل

لاہور: وفاقی وزیر اطلاعات قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کے غیر جمہوری اقدام کا جواب جمہوری اور سیاسی انداز میں دیں گے۔
ایکسپریس نیوز کے مطابق وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن نے ان لوگوں کی اپنی جماعت میں شامل کیا جو ڈیڑھ سال پہلے ہی عملی و نظریاتی طور پر پیپلز پارٹی چھوڑ چکے تھے اور یہ وہ ارکان ہیں جنہوں نے اپنی وفاداریاں تبدیل کیں اور سینیٹ الیکشن میں مسلم لیگ ن کو ووٹ دئیے ، انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کو صدر کے دورہ لاہور سے تکلیف ہوئی اسی لئے یہ ڈرامہ رچایا گیا ۔
قمر زمان کائرہ نے کہا کہ مسلم لیگ ن کے غیر جمہوری اقدام کا جواب جمہوری اور سیاسی انداز میں دیں گے ، مسلم لیگ ن میثاق جمہوریت کی خلاف وزری کر رہی ہے، مسلم لیگ ق اورپھر پیپلز پارٹی کے ارکان کی وفاداریاں تبدیل کرانا اسکا ثبوت ہے، مسلم لیگ (ن) اگر ق لیگ کے ارکان کو لوٹا نہ بناتی تو پنجاب حکومت نہیں چل سکتی تھی۔
پنجاب حکومت لوٹوں کے سہارے کھڑی ہے،وفاداریاں تبدیل کرنیکا عمل رک جانا چاہیے دہری شہریت کے حامل پاکستانیوں کو غیر ملکی نہیں کہا جا سکتا صدر زرداری کے لاہور آنے سے مسلم لیگ (ن)بوکھلاہٹ کا شکار ہوگئی ہے ،بلاول ہاؤس میں پیپلز پارٹی کی میٹنگوں سے (ن) لیگ گھبراہٹ کا شکار ہے قمر زمان کائرہ نے کہا کہ ن لیگ میں شامل ہونے والے پی پی ارکان پنجاب اسمبلی شہباز شریف سے فنڈز لیتے رہے ہیں،یہ سیاست کا حسن نہیں بد قسمتی ہے،عظمیٰ بخاری اور سمیع اللہ خان کے جانے سے پارٹی کو تکلیف اور افسوس ہے، خواہش ہےکہ وہ واپس پارٹی میں آجائیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت کو سوائے ڈنڈے مارنے کے کچھ نہیں آتا،کچھ دوست تھانے ،کچہری کی سیاست میں ماہر ہیں،پنجاب حکومت لوٹوں کے سہارے کھڑی ہے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ وفاداریاں تبدیل کرنے کا عمل یہیں رک جانا چاہیے،یہ اچھی بات نہیں،یہ نظریے کی سیاست نہیں اقتدار کی سیاست ہو رہی ہے،اس سے سیاست میں بہتری آنے کا امکان نہیں۔
پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف راجہ ریاض کا کہنا ہے کہ پارٹی چھوڑ کر جانے والے ارکان اسمبلی کے خلاف الیکشن کمیشن میں نااہلی کی درخواست دائر کی جائے گی ۔
لاہور میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے رہنما نے کہا کہ پیپلز پارٹی چھوڑنے والے ارکان اسمبلی دوبارہ الیکشن لڑنے کے اہل نہیں رہے،انہوں نے پارٹی کا انتخابی ٹکٹ لیتے وقت وفاداری کا حلف لیا تھا ، انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی سیاسی وابستگی ختم کرنے والے ارکان اسمبلی کی نااہلی کیلئے الیکشن کمیشن میں درخواست دی جائے گی۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں