پنجاب حکومت کیخلاف وائٹ پیپر،پی پی کو گھپلوں کے ثبوت مل گئے

320968_320999601335285_1510495032_n

نگران حکومت کے بعد وائٹ پیپر سامنے لایا جائیگا، آڈیٹر جنرل کی رپورٹس لگائی جائینگی
لاہور(فرخ بصیر سے )پیپلز پارٹی نے نگران حکومت بننے کے بعد مسلم لیگ ن کی پنجاب حکومت کی5سالہ کارکردگی پر وائٹ پیپر شائع کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کے ساتھ آڈیٹر جنرل کی رپورٹس بھی لگائی جائینگی۔پیپلز پارٹی پنجاب کی پارلیمانی پارٹی نے ن لیگی حکومت کی طرف سے پانچ برس کے دوران قواعد و ضوابط سے ہٹ کر شروع کیے گئے ترقیاتی منصوبوں اور سکیموں میں مالی گھپلوں کے دستاویزی ثبوت اکٹھے کر لیے ، وائٹ پیپر کی تیاری میں مصروف پیپلز پارٹی پنجاب کے ڈپٹی پارلیمانی لیڈر شوکت بسرا نے چیف جسٹس سپریم کورٹ سے مطالبہ کیا کہ وہ پنجاب حکومت کے قومی خزانے پر بوجھ بننے والے ناکام منصوبوں کا ازخود نوٹس لیں ورنہ پیپلز پارٹی انکی ریٹائرمنٹ کے بعد مسلم لیگ ن کی صوبائی حکومت کیخلا ف وائٹ پیپر عدالت میں لے جائیگی، انہوں نے بتایا کہ ہم نے سستی روٹی ، مکینیکل تنور، فوڈ سٹمپ ، آشیانہ ،پیلی ٹیکسی سکیم، جنگلہ بس سروس،دانش سکول، لیپ ٹاپ سکیم میں گھپلوں کی تفصیلات اور دستاویزی ثبوت اکھٹے کر لیے جنہیں وائٹ پیپر کی شکل میں عوام کے سامنے لائیں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ اس وقت پنجاب حکومت 414ارب کی مقروض ہو چکی ہے اور انکے پاس تنخواہیں دینے تک کے پیسے نہیں ۔
Source: Roznama Dunya

اپنا تبصرہ بھیجیں