پاک ایران گیس پائپ لائن ہر صورت مکمل کی جائے گی صدر زرداری اور ایرانی لیڈروں کاعزم

صدرزرداری کی احمدی نژاد سے ملاقات، ترقیاتی منصوبوں پر غور‘ مخالفت اوردباؤ کے باوجودمنصوبہ مکمل کیا جانا چاہئے: خامنہ ای
11636_10151536692948338_951506949_n

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک ،دنیا نیوز ،ایجنسیاں) پاکستان اورایرانی قیادت نے پاک ایران گیس پائپ لائن کو ہرصورت مکمل کرنے کا عزم کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاک ایران گیس پائپ لائن کا منصوبہ اسلام آباد اورتہران کے درمیان بڑھتے ہوئے تعلقات کی ایک مثال ہے ،اس کو تمام تردباؤ کے باوجود مکمل کیاجانا چاہئے ۔پاکستان اور ایران کے درمیان سربراہ کی سطح پر مذاکرات ہوئے ،پاکستانی وفد کی سربراہی صدر آصف علی زرداری اورایرانی وفد کی قیادت صدرمحمود احمدی نژاد نے کی ،مذاکرات میں دوطرفہ تعلقات اوراہم علاقائی امورپر تبادلہ خیال ہوا۔دونوں ممالک کے درمیان بڑے ترقیاتی منصوبوں کو حتمی شکل دینے سے متعلق امور بھی زیرغور آئے ،صدر زرداری نے کہا کہ ایران گیس کی ضرورت پوری کرنے میں مدد کرے جس پراحمدی نژاد نے یقین دلایا کہ ان کا ملک پاکستان کی ضروریات پوری کریگا،صدر زرداری نے پرامن مقاصد کیلئے ایران کے ایٹمی پروگرام کی حمایت کی یقین دہانی کرادی۔مشیرپٹرولیم ڈاکٹر عاصم حسین اوراعلیٰ حکام نے آصف علی زرداری جب کہ ایران کے وزیرخارجہ اوروزیرتیل نے ایرانی صدر کی معاونت کی ۔اس سے پہلے آصف علی زرداری اور ایرانی ہم منصب محمود احمدی نژاد کے درمیان ہونے والی ون آن ون ملاقات بھی ہوئی جس میں دونوں ہمسائیہ ملکوں کے درمیان تعلقات کو مزید فروغ دینے سے متعلق تبادلہ خیال ہوا۔ دونوں رہنماؤں نے پاکستان میں ایران کی مدد سے مکمل ہونے والے بڑے بڑے منصوبوں پر بھی بات چیت کی ، ان منصوبوں میں پاک ایران گیس پائپ لائن اور بلوچستان کے کچھ علاقوں میں سستی بجلی مہیاکرنا شامل ہے ۔ دونوں رہنماؤں نے ان منصوبوں کو جلد از جلد مکمل کرنے پر اتفاق کیا جن سے پاکستان کی ترقی کا عمل تیز کرنے اور توانائی کی کمی پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔ صدر زرداری اور ایران کے سپریم لیڈر آیت اﷲ خامنہ ای کے درمیان بھی تہران میں ملاقات ہوئی جس میں پاک ایران گیس پائپ لائن کواسلام آباد اورتہران کے درمیان تعلقات میں وسعت کی علامت قر ار دیتے ہوئے اسے تمام تردباؤ اورمخالفت کے باوجود مکمل کرنے کا عزم ظاہر کیا گیا، مسلم امہ کو درپیش مسائل کے حوالے سے گفتگو ہوئی۔ ایران نے کہا ہے پاکستان کے ساتھ گیس پائپ لائن کی تعمیر کا کام جلد شروع کر دیا جائے گا جبکہ مشیر پٹرولیم ڈاکٹر عاصم کا کہنا ہے قوم کو جلد خوشخبری سنائیں گے ۔ ایرانی وزیر تیل رستم قاسمی کا کہنا ہے کہ ایران توانائی کے شعبے پاکستان سے بھرپور تعاون کرنا چاہتا ہے اورزراعت کے شعبے میں پاکستان کی مہارت سے استفادہ کرنا چاہتا ہے ۔ صدر مملکت کا دورہ ایران دونوں ملکوں کے درمیان اعلیٰ سطحی مشاورت کی کڑی ہے جس میں پاکستان اور ایران کے درمیان ہونے والے معاہدوں کو بھی حتمی شکل دی جائے گی۔قبل ازیں صدرمملکت کے ایران پہنچنے پر ایرانی وزیرپٹرولیم رستم قاسمی نے ایئرپورٹ پر پرتپاک استقبال کیا ،ایرانی مسلح افواج کے چاک وچوبند دستے نے سلامی دی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں