دنیا کی کوئی طاقت پاک ایران گیس پائپ لائن سے نہیں روک سکتی :صدر زرداری

64840_383595098413984_727488426_n

صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ دنیا کی کوئی طاقت پاک ، ایران گیس پائپ لائن کی تعمیر سے نہیں روک سکتی ، اتفاق رائے ہو تو بیرونی طاقت ہمار ا کچھ نہیں بگاڑ سکتی، منصوبے پر امریکہ سے بات کریں گے ۔بلاول ہاؤس لاہور سینئر صحافیوں ، اینکر پرسنز سے بات چیت کے دوران انہوں نے کہا کہ توانائی بحران پر قابو پانے کیلئے کسی بھی ملک سے معاہدے کر سکتے ہیں ، توانائی کی ضروریات پوری کرنے کیلئے ایران سے معاہدہ کیا، عالمی قوانین کی خلاف ورزی نہیں کی۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان آزاد ملک ہے ،اپنے فیصلے خود کریں گے ،منصوبہ اہم پیشروفت ہے ، شدید دباؤ کے باوجود گوادر پورٹ کا انتظام بندوبست چین کے سپرد کیا ۔ صدر نے کہا کہ آئین کے مطابق عام انتخابات وقت پر ہوں گے ،ملک میں اب کوئی الیکشن نہیں روک سکتا،افغانستان میں حالت جنگ میں الیکشن ہوسکتے ہیں تو پاکستان میں کیوں نہیں ،الیکشن میں بلوچستان کے تمام گروپ حصہ لیں گے ،آغازحقوق بلوچستان سے بڑھ کر کچھ نہیں کر سکتے ،میں غلام اسحاق خان نہیں بنوں گا، سازش کی بجائے عام انتخابات کے بعد جو حکومت بنی اس سے فوری طور پر حلف لوں گا، الیکشن جیتنے والے کو فوری اقتدار منتقل کر دوں گا، جمہوری طریقے سے اقتدار منتقل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کی طرف سے تاحال نگران وزیراعظم کا نام نہیں آیا، آئین کے آرٹیکل 63،62 پر پورا اترنے والے ایماندار امیدوار کو سامنے لائیں گے ،صدر نے ایک سوال کے جواب میں یوسف رضا گیلانی کاہاتھ بلند کرتے ہوئے کہاکہ انتخابات میں پارٹی کی انتخابی مہم کی قیادت یوسف رضاگیلانی کریں گے ۔اب کوئی ہم سے جمہوری نظام نہیں چھین سکتا، سویلین طاقتیں مضبوط ہونے سے نان سٹیٹ ایکٹرز کمزور ہوں گے ، نان سٹیٹ ایکٹرز کچھ سیاسی جماعتوں کی کمزوری ہیں ،کسی حالت میں جمہوریت کو پٹڑی سے نیچے نہیں اترنے نہیں دیں گے ، چیف الیکشن کمشنر فخر الدین جی ابراہیم پوری طرح الیکشن کرانے کے اہل ہیں ،مولانا فضل الرحمان کو بطور جمہوری سیاستدان تسلیم کرتا ہوں۔ اگر سپر پاور مذاکرات کر سکتی ہے تو ہمیں بھی حرج نہیں ۔ آصف علی زرداری نے کہاکہ حکومت کے 5سال آسانی سے نہیں گزرے ،مشکلات کے باوجودبہت سے کام کئے بہت سے باقی ہیں۔صدر نے کہاکہ لاہور میں گھر بنانا انکا خواب تھا،وہ ہر ماہ صحافیوں سے ملتے رہیں گے ،جمہوریت برداشت کا نام ہے ، جمہوریت مضبوط ہاتھوں میں ہے ، اب کوئی شب خون نہیں مار سکتا،امن کیلئے سویلین فورسز کو متحرک کیا جائے گا۔ صدر زرداری لاہور (خصوصی رپورٹر /سپیشل رپورٹر /مانیٹرنگ ڈیسک)صدر آصف علی زرداری نے لاہور میں گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد مسلم لیگ ق کے رہنما چوہدری شجاعت ، پروز الہی اور صا حبزادہ فضل کریم سے ملاقاتیں کی ہیں ، صدر گورنر سندھ عشرت العباد کے ساتھ ملاقات میں پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم کے درمیان دوریاں ختم کر کے ساتھ چلنے پر اتفاق کیا ہے ۔بلاول ہاؤس لاہور میں ہونے والی ملاقات کے دوران صدر آصف علی زرداری اور گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان کے درمیان سندھ کی موجودہ سیاسی و امن و امان کی صورت حال، پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم کے تعلقات سمیت سندھ میں نگران سیٹ اپ کے قیام ، وزرا کے استعفوں اور دیگر اہم امور پر بات چیت ہوئی۔ملاقات کے دوران ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی کے درمیان پیدا ہونے والی دوریاں ختم کرنے پر اتفاق کیا گیا، اس موقع پر صدر آصف علی زرداری نے ایم کیو ایم کے تمام خدشات اور تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی کرائی۔صدر آصف علی زرداری اور چوہدری برادران نے انتخابات میں گرینڈ الائنس کی تشکیل کا طریقہ کار طے کرنے کیلئے کمیٹی بنانے پر اتفاق کیا ہے ،اس موقع پر دونوں سیاسی جماعتوں کے قائدین نے انتخابات کے لیے گرینڈ الائنس کا طریقہ کار طے کرنے کے لیے کمیٹی بنانے پر اتفاق کیا۔ ملاقات میں یہ بھی فیصلہ ہوا کہ پیپلز پارٹی اور ق لیگ عام انتخابات میں اپنے اپنے انتخابی نشان کیساتھ میدان میں اتریں گی ۔ اس موقع پر دونوں پارٹیوں کی قیادت کے درمیان نگراں وزیر اعظم کے ناموں پر بھی مشورہ کیا گیا، ذرائع کے مطابق ق لیگ کی قیادت کو اگلے تین چار روز میں نگرا وزیر اعظم کے 4 نام دینے کو کہا گیاہے ، اس سلسلے میں ق لیگ اپنے ناموں کو حتمی شکل دے کر بدھ کے روز پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین کو پیش کرے گی۔آصف علی زرداری سے سنی تحریک کے سربراہ صاحبزادہ فضل کریم نے ملاقات کی،ملاقات میں گرینڈ الائنس کے قیام کے لئے کمیٹی تشکیل دینے پر اتفاق کیاگیا،صدر آصف علی زرداری سے گزشتہ روز وفاقی وزیر پانی وبجلی چودھری احمد مختار نے بلاول ہاؤس میں ملاقات کی اس موقع پر صدر نے نائب وزیر اعظم چودھری پرو یز الٰہی کی گجرات سے سپورٹ کر نے سے انکار کر تے ہوئے چودھری احمد مختار کودوبارہ ٹکٹ دینے کی یقین دہا نی کرادی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں