پنجاب حکومت734دہشتگرد گرفتارکرے تو ملک میں امن ہو جائے گا :رحمان ملک

لشکر جھنگوی کا پنجاب میں ہیڈ کوارٹرز کھلی حقیقت ہے ،کوئٹہ میں دھماکے کیلئے مائع بم کاساراموادیہیں سے گیا،تنظیم کیخلاف کارروائی کیلئے 3سال سے کہہ رہاہوں:وزیرداخلہ سری لنکن ٹیم پر حملے کی ذمہ داری بھی پنجاب حکومت پر عائد ہوتی ہے ،کراچی اور کوئٹہ کے علاوہ ہر جگہ طالبان کا خطرہ ختم ہوگیا:لاہورمیں گفتگو،شہبازشریف کومناظرے کاچیلنج
55074-rahman-1354029420-747-640x480

لاہور(سپیشل رپورٹر/دنیا نیوز)وفاقی وزیر داخلہ رحمن ملک نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خاتمہ کیلئے لشکر جھنگوی کا قلع قمع کرنا پڑے گا، پنجاب حکومت کو لشکر جھنگوی کے 734 دہشتگردوں کی فہرست دیدی ، اگرانکو گرفتار کر لیاجائے توملک میں امن ہو جائیگا،میں نے لشکر جھنگوی کیساتھ کبھی کھانا کھایا نہ مارچ پاسٹ کیا ہے ۔گزشتہ روزلاہور آمد پر میڈیا سے گفتگو کر تے ہوئے انہوں نے مزید کہالشکر جھنگوی کیخلاف کارروائی کی بات 3 سال سے کر رہا ہوں، سری لنکن ٹیم پر حملے کی ذمہ داری بھی پنجاب حکومت پر عائد ہوتی ہے ، لشکر جھنگوی کا پنجاب میں ہیڈ کوارٹرز کھلی حقیقت ہے ،کوئٹہ میں جومائع بم چلایاگیااسکاساراموادلشکرکے لوگ پنجاب سے لیکرگئے ۔انہوں نے کہا کراچی اور کوئٹہ کے علاوہ ہر جگہ طالبان کا خطرہ ختم ہوگیا ،اے پی سی میں2 کالعدم تنظیمیں شریک تھیں توپھر تحریک طالبان پاکستان کو بلانے میں کیا حرج تھا؟طالبان سے مذاکرات کی حمایت کرتا ہوں لیکن ایسا ممکن نہیں کہ وہ ہمارے لوگوں پر حملے بھی کریں اور مذاکرات بھی ،دونوں کام ایک ساتھ نہیں چل سکتے ۔ لوگوں نے اربوں روپے کے محل بنائے لیکن کسی نے کوئی بات نہیں کی مگر آج بلاول ہاؤس کے بارے میں بڑی باتیں کی جا رہی ہیں۔ پیپلز پارٹی الیکشن میں ٹف ٹائم دے گی، سیاسی جماعتوں کو بلیم گیم کی بجائے کوڈ آف کنڈکٹ تیار کرنا ہوگا۔رحمن ملک نے بتایاکہ لندن میں الطاف حسین کیساتھ ملاقات انتہائی کامیاب رہی ،قائدمتحدہ سے پاکستان کی بہتری کیلئے بات کرتے ہیں، سیاست کچھ لو اور کچھ دو کا نام ہے ،الیکشن میں ایم کیو ایم سے سیٹ ایڈجسٹمنٹ بھی ہو سکتی ہے ۔وزیرداخلہ نے وزیراعلیٰ شہبازشریف کومناظرے کاچیلنج دیتے ہوئے کہاکہ اگروہ تعاون کریں توملک بہت جلددہشت گردی سے پاک ہوجائیگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں