شہباز شریف نے بڑے منصوبوں میں ککس بیک نہیں لئے تو اثاثے ظاہر کریں : میاں منظور وٹو

528383_227034897434273_1014959957_n

وفاقی وزیر امور کشمیر، گلگت بلتستان اور پی پی پی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے ان کے حلقے میں جا کر ان پر الزامات لگائے۔ انہوں نے میرے خلاف پہلے بھی مقدمات بنائے تھے جن میں میں باعزت بری ہوا، میں نے تب بھی اخبارات میں اپنے اثاثوں کی تفصیلات کا اشتہار دیا تھا، اب پھر اثاثوں کی تفصیلات کا اشتہار دوں گا۔ میاں شہباز شریف نے اگر بڑے منصوبوں میں ککس بیک نہیں لیں تو ایمانداری سے اپنے اور فیملی کے اثاثے اور بیرون ملک اثاثے بھی قوم کے سامنے پیش کریں۔ لاہور میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے میاں منظور وٹو نے کہا ان کے اور ان کے بچوں کے نام بیرون ملک کوئی جائیداد نہیں۔ انہوں نے کہا کہ شیشے کے گھر میں بیٹھ کر پتھر مارنے والے یاد رکھیں کہ وہ بھی نہیں بچ سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پی پی پی کے منشور پر کام جاری ہے، الیکشن سے بہت پہلے اس کا اعلان کر دیا جائیگا۔ اس سوال پر کہ پیپلز پارٹی کے ارکان اسمبلی مسلم لیگ (ن) میں شامل ہو رہے ہیں؟ انہوں نے کہا کہ جاوید علاﺅ الدین تین سال قبل اور خانیوال کے تینوں ارکان صوبائی اسمبلی دو سال قبل جا چکے تھے۔ انہیں علم تھا کہ ان کی حیثیت کمزور ہے، ان کو ٹکٹ نہیں ملے گا اس لئے وہ چلے گئے مگر انہیں وہاں بھی ٹکٹ نہیں ملے گا، یہ خوار ہوں گے۔ دریں اثناءمریدکے میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کا منشور عوام کو بے وقوف بنانے کے سوا کچھ نہیں۔ میاں نوازشریف وزیراعظم بننے کے لئے ہر حربہ استعمال کرنا چاہتے ہیں۔ پہلے بھی میں نے بطور وزیر اعلیٰ پنجاب صوبہ کی خدمت کی ہے۔ دوبارہ پنجاب میں حکومت بنا کر مثالی خدمت کروں گا۔ آئندہ انتخابات کے بعد پنجاب میں ہر صورت پیپلز پارٹی کی حکومت بنے گی۔ علاوہ ازیں گوجرانوالہ میں رات گئے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے میاں منظور وٹو نے کہا صوبائی خودمختاری کے بعد ہائیڈرل پاور جنریشن، مہنگائی اور امن و امان کے قیام کا اختیار صوبوں کے پاس ہے لیکن ملک کے بڑے صوبے پنجاب پر حکومت کرنے والی مسلم لیگ (ن) نے 5 سال میں عوامی فلاح کیلئے کچھ نہیں کیا، پیپلز پارٹی نے ہمیشہ عوامی مفاد کو مدنظر رکھ کر فیصلے کئے ہیں، پیسے کے بل بوتے پر مقبولیت کے جعلی سروے بنوانے والوں کی نسبت پی پی کا منشور عوامی ہو گا کارکن اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کریں آئندہ عام انتخابات میں پیپلز پارٹی انہےں سرپرائز دے گی۔ جلسہ میں تنویر اشرف کائرہ، ایم پی ایز چودھری طارق گجر، میاں ارقم خاں، امےدوار اےن اے 95 چودھری صدےق مہر اور سٹی صدر لالہ اسد اللہ پاپا بھی موجود تھے۔ منظور وٹو کا کہنا تھا کہ الیکشن کا طبل بج چکا ہے اور پیپلز پارٹی نے کمپین کا آغاز گوجرانوالہ سے کر دیا۔ انہوں نے کہا آئندہ پیپلز پارٹی دوبارہ حکومت میں آکر بینظیر انکم سپورٹ پروگرام ڈبل کر دے گی۔ انہوں نے کہا کہ لاہور کی اےک سڑک پر 72 ارب روپے خرچ کر دئےے ہےں جسے لوگ جنگلہ بس کہتے ہےں اگر ےہ رقم پنجاب بھر کی سڑکوں پر لگائی جاتی تو ان کی حالت بہتر ہو جاتی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں