راجہ پرویز اشرف 24مارچ تک وزیراعظم برقرار رہیں گے: میاں منظور وٹو

226520_227430024061427_1169285126_n

اسلام آباد : وفاقی وزیر امور کشمیر میاں منظور احمد وٹو نے کہا ہے کہ اگر 16 مارچ تک نگران وزیراعظم کے نام پر حکومت اپوزیشن اتفاق نہ ہوسکا تو موجودہ وزیراعظم راجہ پرویز اشرف ہی 24 مارچ تک عہدے پر برقرار رہیں گے۔ پارلیمانی کمیٹی کو اتفاق رائے سے فیصلہ کرنے کیلئے 4 دن ملیں گے۔ اگر پھر بھی فیصلہ نہ ہوا تو الیکشن کمشن ہی حتمی فیصلہ کرے گا۔ جاری بیان کے مطابق میاں منظور وٹو نے صدر آزاد کشمیر سے ملاقات کے دوران کہا کہ پاکستان میں حکومت اور اپوزیشن نے ملکر ججوں کی تعیناتی کا ایسا میکنزم تیار کیا ہے جس میں سفارش، اقربا پروری، رشوت یا پسند نا پسند کی گنجائش نہیں رہی۔ سفارش اقربا پروری اور کسی قسم کی لالچ میں آئے بغیر اچھی شہرت اور میرٹ کو بنیاد بنا کر ججوں کی تعیناتی کی منظوری دی جس پر کوئی انگلی نہیں اٹھا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ جو چار شخصیات جج تعینات ہوئی ہیں ان میں سے کسی کو ذاتی طور پر ملا نہ جانتا ہوں۔ میاں منظور احمد وٹو نے اس حوالے سے صدر آزاد کشمیر کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ ججوں کی میرٹ پر تعیناتی کا سارا کریڈٹ آپ کو جاتا ہے۔ منظور احمد وٹو نے کہا کہ نگران وزیراعظم کیلئے پیپلزپارٹی بعض ناموں پر غور کر رہی ہے۔ پارلیمانی کمیٹی کو اتفاق رائے سے فیصلہ کرنے کیلئے 4 دن ملیں گے۔ اگر پھر بھی فیصلہ نہ ہوا تو الیکشن کمشن ہی حتمی فیصلہ کرے گا۔
وفاقی وزیر میاں منظور احمد وٹو نے پارلیمنٹ کے پانچ سال مکمل ہونے پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ کہا کہ میثاق جمہوریت کے بعد سیاستدان سنجیدگی کا مظاہرہ کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ سپیکر قومی اسمبلی فہمیدہ مرزا کی کارکردگی مثالی رہی

اپنا تبصرہ بھیجیں