پیپلز پارٹی نے پانچ سال میں ادارے بنائے ہیں جنگلے نہیں, مسلم لیگ ن ضد کا نہیں مفاہمت کا راستہ اختیار کرے: میاں منظوروٹو

226520_227430024061427_1169285126_n

لاہور: پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے کہا ہے کہ ڈاکٹر عشرت حسین اور جسٹس ریٹائرڈ میر ہزار کھوسو سے زیادہ غیر جانبدار کون ہوگا ؟، مسلم لیگ ن ضد کا نہیں مفاہمت کا راستہ اختیار کرے ، پارٹی کارکنوں اور عہدیداروں سے بات چیت میں میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ مسلم لیگ ن سندھ ، بلوچستان کی نگران حکومتوں پر تحفظات کا اظہار کس آئین کے تحت کر رہی ہے ،انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی جمہوریت کے خلاف ہونے والی ہر سازش کے سامنے دیوار بن کر کھڑی رہے گی انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے پانچ سال میں ادارے بنائے ہیں جنگلے نہیں ، ہمارے مخالفین نے پنجاب بھر کے بجٹ سے میٹرو بس چلا کر لاہور کا حلیہ بگاڑ کر رکھ دیا ہے ، انہوں نے کہا کہ ترقی کے دعویداروں نے اداروں کا بیڑہ غرق کر دیا- ، انہو ں نے کہاکہ آنے والے عام انتخابات میں ووٹرز دعووں اور نعروں پر نہیں بلکہ صرف اور صرف کارکردگی کی بنیاد پر ووٹ دینگے – انہوں نے کہا کہ عوام بیدار ہو چکے ہیں وہ کسی کو جمہوریت کے خلاف سازش نہیں کرنے دینگے اور نہ ہی عام انتخابات ملتوی کرانے کی کوئی سازش کامیاب ہونے دینگے ، منظور احمد وٹو نے کہا کہ صدر مملکت آصف علی زرداری نے پاک ایران گیس پائپ لائن کا معاہدہ کر کے جراتمندی کا مظاہرہ کیا -بھارت جیسا بڑا ملک بھی عالمی پریشر کے سامنے ٹک نہ سکا اور بھاگ گیا جبکہ صدر مملکت آصف زرداری نے ملکی خود مختاری پر کوئی سودا نہیں کیا – انہوں نے کہا کہ پاک ایران گیس منصوبے سے پاکستان میں میں گیس کا بحران ختم ہو جائیگا ، انہوں نے کہا کہ گوادر پورٹ آپریشن کی ذمہ داری چین کے سپرد کرنے کا فیصلہ دور رس نتائج کا حامل ہے اور یہ فیصلہ پورے خطے کے مفاد میں ہے – انہو ں نے کہا کہ صدر زرداری کے یہ دلیرانہ اور قومی مفادات سے ہم آہنگ فیصلے ہمارے خارجہ پالیسی کو عوامی امنگوں سے ہم آہنگ کرنے کا باعث بنے ہیں- انہوں نے کہا کہ صدر آصف زرداری کی مفاہمانہ سیاسی حکمت عملی کے نتیجے میں ہی پارلیمنٹ اپنی مدت پوری کر سکی اور جمہوریت کو استحکام ملا ، انہوں نے کہاکہ تاریخی پارلیمنٹ کے پانچ سال پورے ہونے کا کریڈٹ کوئی اور نہیں لے سکتا

اپنا تبصرہ بھیجیں