پنجاب بھر کے عوام پیپلز پارٹی کو دل و جان سے چاہتے ہیں, انہیں پتہ ہے کہ پیپلز پارٹی ہی ملک و قوم کو بحرانوں اور مشکلات سے نکالنے اور تعمیر و ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کی اہلیت رکھتی ہے: میاں منظوروٹو

188822_230257290445367_72184262_n

لاہور: صدر پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب میاں منظور احمد وٹو نے کہا ہے کہ نگران وزیر اعظم کے معاملہ پر جلد اتفاق رائے ہو جائے گا جبکہ اتحادی جماعتوں کے ساتھ سیٹ ایڈجسٹمنٹ بھی حتمی مراحل میں پہنچ چکی ہے – اپنی رہائشگاہ پر میڈیا سے غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عام انتخابات وقت پر ہونگے اور التواء کی تمام سازشیں عوامی تائید سے ناکام بنا دی جائیں گی انہوں نے کہا کہ نگران سیٹ اپ کے معاملہ پر تمام جمہوری جماعتوں میں اتفاق رائے ہو چکا ہے صرف ن لیگ تاخیری حربے استعمال کر رہی ہے – میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ مسلم لیگ ق کے ساتھ سیٹ ایڈجسٹمنٹ مکمل ہونے والی ہے اور اس حوالہ سے آج حتمی مذاکرات خوش اسلوبی سے طے پا جانے کی توقع ہے – ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 104 جہاں سے چوہدری احمد مختار اور چوہدری پرویز الہی انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں کا معاملہ بھی افہام و تفہیم سے طے پا جائے گا- انہوں نے کہا کہ پنجاب میں صورتحال تیزی سے بدل رہی ہے اور شہباز شریف کے منفی طرز عمل ، ناقص پالیسیوں ، ناکام منصوبوں ، قومی وسائل کے ضیاع ، لوٹ مار اور کرپشن سے نالاں عوام بے تابی سے عام انتخابات کے منتظر ہیں – میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پنجاب کے باشعور عوام ووٹ کی طاقت سے پنجاب میں انقلابی تبدیلی لانے اور پاکستان پیپلز پارٹی کا عوامی راج قائم کرنے کیلئے سنجیدہ ہو چکے ہیں اور وہ وقت اب زیادہ دور نہیں کہ جب پنجاب میں بھی لوٹ کھسوٹ اور ذاتی بادشاہت کے بجائے حقیقی عوامی راج قائم ہو گا ، انہوں نے کہا کہ پنجاب بھر کے عوام پیپلز پارٹی کو دل و جان سے چاہتے ہیں اور اپنے مسائل حل کرنے کی ضمانت گردانتے ہیں ، انہیں پتہ ہے کہ پیپلز پارٹی ہی ملک و قوم کو بحرانوں اور مشکلات سے نکالنے اور تعمیر و ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کی اہلیت رکھتی ہے – میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ چین اور ایران سے اشتراک و تعاون بڑھانے سے اقوام عالم میں پاکستان کے وقار میں اضافہ ہوا ہے اور خارجہ پالیسی کو حقیقت پسندانہ ، جراتمندانہ اور قومی امنگوں سے ہم آہنگ کرنے کو سراہا جا رہا ہے ، انہوں نے کہا کہ صدر زرداری کے تدبر ، دوراندیشی اور جرات نے پاکستان کے مستقبل کو محفوظ اور تابناک بنانے کی بنیاد رکھ دی ہے – خصوصا” علاقائی تعاون برائے امن و ترقی کے فروغ پر مبنی چین اور ایران سے کئے گئے حالیہ معاہدے دور رس مثبت نتائج کے حامل ہیں جن کے اثرات پورے خطے پر مرتب ہونگے –

اپنا تبصرہ بھیجیں