مسلم لیگ ن نے پانچ سال کے دوران پیپلز پارٹی کی مفاہمتی سیاست سے کچھ نہیں سیکھا: میاں منظور احمد وٹو

226520_227430024061427_1169285126_n

لاہور: پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن نے پانچ سال کے دوران پیپلز پارٹی کی مفاہمتی سیاست سے کچھ نہیں سیکھا – پیپلز پارٹی نے اپوزیشن کی تمام جماعتوں کو ساتھ ملا کر انتقال اقتدار کا جو متفقہ آئینی طریقہ کار وضع کیا ، مسلم لیگ ن اس کی روح کو سمجھ نہیں سکی اور محض سیاسی پوائنٹ سکورنگ میں مصروف ہے – میڈیا سے بات چیت کے دوران میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی طرف سے پارلیمانی کمیٹی میں یکطرفہ طور پر اپنی ہی پارٹی کے چار نام دیدئیے گئے ، انکا یہ اقدام ظاہر کرتا ہے کہ وہ اپنے علاوہ کسی اور کو اپوزیشن میں بھی نہیں دیکھنا چاہتے – انہوں نے کہا کہ حکومت میں آکر وہ لوگوں کو کسطرح ساتھ لے کر چل سکتے ہیں – انہوں نے کہا کہ پنجاب میں شہباز شریف نے پانچ سال کے دوران ون مین شو چلایا اور خود کو اختیارات کا گھنٹہ گھر بنائے رکھا – یہ مسلم لیگ ن کی سیاسی امیچوریٹی کا ثبوت ہے – انہوں نے کہا کہ بدقسمی کی بات ہے کہ اب جبکہ آئندہ انتخابات سے قبل نگران حکومت کی تشکیل کا اہم ترین موقع درپیش ہے تو ن لیگی قیادت ایک بار پھر ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کر رہی ہے ، لیکن ہم قوم کو یقین دلاتے ہیں جسطرح ہم پانچ سال میں بڑے بڑے طوفانوں سے جمہوریت کی کشتی کو کھینچ کر لائے ہیں اس آزمائش کی گھڑی میں بھی پیپلز پارٹی جمہوری اور سیاسی کردار کا مظاہرہ کرتے ہوئے امتحان میں پورا اترے گی اور تمام سازشیں ناکام بنا کر بروقت انتخابات کاانعقاد یقینی بنائے گی

اپنا تبصرہ بھیجیں