جمہوریت ، پارلیمنٹ کے استحکام اور جمہوری عمل کے تسلسل پر پوری قوم مبارکباد کی مستحق ہے: میاں منظور احمد وٹو

188822_230257290445367_72184262_n

25 مارچ 2013 کا دن جمہوری تاریخ میں یادگار دن رہے گا – کل کے وزیر اعظم کا آج کے وزیر اعظم کی حلف برداری میں شریک ہونا انہونا واقعہ ہے _ صدر پیپلز پارٹی پنجاب میاں منظور احمد وٹو نے اسلام آباد سے لاہور پہنچنے پرمیڈیا سے غیر رسمی بات چیت میں کہا کہ آج قومی تاریخ کا یادگار دن تھا جب ایوان صدر میں جمہوری تاریخ لکھی جا رہی تھی – اور اقتدار کی پرامن منتقلی ہو رہی تھی -مجھے آج اقتدار کی پرامن منتقلی کا منظر دیکھ کر دلی راحت محسوس ہوئی – انہوں نے کہا کہ میرے ساتھ ساتھ تمام جمہوریت پسند حلقوں نے اس تاریخی منظر سے دلی راحت محسوس کی کہ عوام کے منتخب کردہ سابق وزیر اعظم بھی نگران وزیر اعظم کی تقریب حلف برداری میں موجود تھے- انہوں نے کہا کہ ماضی میں سابق منتخب وزیر اعظم جیل میں ہوتا تھا اور اس کی جگہ نیا وزیراعظم حلف اٹھا رہا ہوتا تھا – انہوں نے کہا کہ جمہوریت ، پارلیمنٹ کے استحکام اور جمہوری عمل کے تسلسل پر پوری قوم مبارکباد کی مستحق ہے- انہوں نے کہا کہ جمہوریت کی گاڑی پٹڑی پر چل پڑی ہے اور اب منتخب جمہوری حکومتوں پر شب خون مارنے کی آمرانہ روایات دم توڑ رہی ہیں – میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ جمہوری استحکام ،پارلیمنٹ کی بالا دستی ، عدلیہ کی آزادی ، با اختیار الیکشن کمیشن ، آزاد میڈیا ، قومی اداروں کی مضبوطی ، آئین کی اصل حالت میں بحالی ، صدر مملکت کو حاصل اختیارات کی ازخود رضاکارانہ طور پر منتحب پارلیمنٹ کو منتقلی ، جمہوری اداروں کا آئینی مدت پوری کرنا ، آئین کے تحت صوبوں کو حقوق ملنا اور اتفاق رائے سے آزاد و خود مختار الیکشن کمیشن کے ذریعے مقررہ وقت پر عام انتخابات کا انعقاد بلا شبہ صدر مملکت آصف علی زرداری کے تدبر ، فہم و فراست اور قائدانہ صلاحیتیوں کا مظہر ہیں ، انہو ں نے کہا کہ یہ تاریخی منظر اس یقین کو مزید پختہ کر رہا ہے کہ پاکستان میں جمہوریت کا پودا مزید پھلے پھولے گا اور ملک و قوم تعمیر و ترقی کی راہ پر گامزن ہونگے – میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ وہ دعا گو ہیں کہ جمہوری عمل کا تسلسل برقرار رہے -انہوں نے کہا کہ 11 مئی کا سورج ، روشن عوامی راج کی نوید لے کر طلوع ہو گا اور ایک منتخب جمہوری حکومت جمہوری انداز میں نو منتخب جمہوری حکومت کو پرامن طور پر خوش اسلوبی کے ساتھ اقتدار منتقل کر کے نئی درخشاں مثال رقم کرے گی -انہوں نے کہاکہ میں دیکھ رہا ہوں کہ 11 مئی کے انتخابات کے بعد پاکستان کے باشعور عوام ایک بار پھر پی پی پی کے وزیر اعظم کو اقتدار منتقل ہوتا ہوا دیکھیں گے –

اپنا تبصرہ بھیجیں