عمران خان نے جمہوریت نہیں مشر ف دور بحال کرنے کی جدوجہد شروع کر رکھی ہے: منیر احمد خان

485895_234044706733292_563595522_n

پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے انچارج پالیسی پلاننگ اینڈ میڈیا منیر احمد خان نے کہا کہ عمران خان کا جنون حقیقی نہیں بلکہ تحریک انصاف ایک پانی کا بلبلہ ہے جو پہلے دو بار کی طرح اب تیسری بار بھی ٹھس ہو جائیگا – پیپلز سیکرٹریٹ میں پارٹی اجلاس کے بعد کارکنوں سے بات چیت میں تحریک انصاف کے سربرہ عمران خان نے مشرف کے جہانگیر ترین ، شیخ رشید ، خورشید قصوری ، پرویز خٹک اور عبدالعلیم خان سمیت متعدد ساتھیوں کو اپنے ساتھ ملا کر جمہوریت نہیں مشر ف دور بحال کرنے کی جدوجہد شروع کر رکھی ہے -انہوں نے کہا کہ عمران خان کے پاس کوئی پروگرام نہیں ، کوئی سوچ نہیں ، جہانگیر ترین نے اگر انقلاب لانا ہوتا تو وہ جنرل مشرف کی کابینہ کے طاقتور وزیر کی حیثیت سے انقلاب نہیں لا سکے تو اب کیا لائیں گے- انہو ں نے کہا کہ نعروں سے انقلاب نہیں آتا – مارشل لاء کی پیداوار ساتھیوں کو ساتھ لے کر اور ان کے جہاز استعمال کر کے سونامی اور جنون کے نعرے عوام کو دھوکہ دینے کے لئے ہیں – انہوں نے کہا کہ یہ وقت مشرف دور بحال کرنے کا نہیں جمہوریت کو تسلسل میں لانے کا ہے – انہوں نے کہاکہ پہلے عمران خان نے مشرف کے ریفرنڈم کو سپورٹ کیا اور اب وہ انکے ساتھیوں کو ساتھ لے کر سیاست کر رہے ہیں – انہو ں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی سیاست ایک تسلسل کا نام ہے اور اس کی جمہوریت کے لئے جہد مسلسل کو کوئی بھی چیلنج نہیں کر سکتا – انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کو دھاندلی کے ذریعے تو شکست دی جا سکتی ہے مگر آزاد اور شفاف الیکشن کی صورت میں پیپلز پارٹی کو کوئی ہرا نہیں سکتا –
انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے پاک ایران گیس معاہدہ اور گوادر کا کنٹریکٹ چین کے ساتھ کیا جس سے پاکستان کی تقدیر بدل جائیگی – انہو ں نے کہا کہ کوئی مائی کا لال انٹرنیشنل دباؤ برداشت کر کے اتنے بڑے معاہدے نہیں کر سکتا تھا – یہ کریڈٹ صرف اور صرف پی پی پی کو جاتا ہے – انہوں نے کہاکہ پیپلز پارٹی نے ادارے بنائے ، جمہوریت کی ایسی بنیاد رکھ دی ہے جو انشااللہ آگے بڑھے گی – پیپلز پارٹی نے ہمیشہ آمریت کے خلاف جدوجہد کی ہے اور ظلم و جبر کا مردانہ وار مقابلہ کر کے نئی تاریخ رقم کی ہے – وہ نظرئیے کے ساتھ کمٹمنٹ کے باعث جیل جانے ، کوڑے برداشت کرنے ، قید و بند کی صعوبتیں سہنے ، پھانسی کے تختے پر چڑھنے اور حود سوزیاں تک دلیری کے ساتھ برداشت کیں – انہو ں نے کہا کہ عوام موقع پرستوں اور مفادات کی سیاست کرنے والوں کو پہچان چکے ہیں اور 11 مئی کو انہیں بری طرح مسترد کر دیں گے –

اپنا تبصرہ بھیجیں