شریف برادران جتنے مرضی نام نہاد اتحاد بنا لیں مگر بھٹو ووٹ بینک پر کسی صورت اثرانداز نہیں ہو سکتے: پیپلز پارٹی پنجاب

534378_158364807634616_2104032123_n

پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے نائب صدر عزیز الرحمان چن اور طارق گجر نے کہا ہے کہ سندھ میں پاکستان پیپلز پارٹی کے سکہ بند ووٹ بنک کو متاثر کرنے کے خواب دیکھنے والوں کو پنجاب میں اپنی نشستیں بچانا دشوار ہو چکا ہے ، 11 مئی کو ان کے سارے خواب چکنا چور ہوجائیں گے اور وہ پھر ملک سے باہر بھاگ جائیں گے – پیپلز سیکرٹریٹ پنجاب میں کارکنوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ن لیگ سندھ میں تان گہ پارٹیوں پر مشتمل آئی جے آئی جیسا چوں چوں کا مربع انتخابی اتحاد بنا کر اس خوش فہمی میں مبتلا ہے کہ وہ سندھ سے تھوڑی بہت عوامی تائید حاصل کر سکے گی تو یہ اس کی خام خیالی اور خود فریبی ہے ، معروضی حقائق اس کے قطعی برعکس ہیں اور سندھ سمیت ملک بھر کے جمہوری سوچ رکھنے والے تمام محب وطن اور باشعور عوام ان چال بازیوں کو اچھی طرح جان چکے ہیں – انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی ملک کی سب سے بڑی اور مقبول عوامی جماعت ہے جس کے قائدین اور کارکنوں نے قربانیوں ا ور خدمات کے ناقابل شکست ریکارڈ قائم کئے ہیں ، انہو ں نے کہا کہ پیپلز پارٹی غریب عوام ، کسانوں ، طلبہ ، مزدوروں اور پسماندہ طبقات کی جماعت ہے جو ملک و قوم کی حالت سدھارنے اور جمہوریت کو مضبوط بنانے کے لئے کوشاں ہے – انہوں نے کہا کہ ن لیگ کو اپنے کرتوتوں ، کرپشن ج ناکام منصوبوں ، ناقص پالیسیوں اور بدترین کارکردگی کے باعث پنجاب میں بھی بدترین شکست کا سامنا کرنا پڑے گا ، انہوں نے کہا کہ شریف برادران نوشتہ دیوار پڑھ لیں – اپنا قیمتی وقت اور ” محنت سے کی گئی نیک کمائی ” ضائع کرنے کی بجائے ابھی سے جدہ جانے کی تیاری کر لیں ، عزیز الرحمان چن اور طارق گجر نے کہا کہ سندھ میں پیپلز پارٹی کے خلاف شریف برادران جتنے مرضی ڈرامے رچا لیں ، نام نہاد اتحاد بنا لیں مگر بھٹو ووٹ بینک پر کسی ھی صورت اثرانداز نہیں ہو سکتے ، انہوں نے کہاکہ اب مفاداتی سیاست اور انتخابی شعبدہ بازیوں کا زمانہ نہیں رہا اور عوامی تائید صرف اور صرف کارکردگی کی بنیاد پر ہی مل سکتی ہے –

اپنا تبصرہ بھیجیں