الیکشن کمیشن انتخابی قواعد وضوابط کی پابندی یقینی بنانے کے لئے یکساں پیمانہ اپنائے: تنویر اشرف کائرہ,راجہ عامرخان

541624_383063468467147_2098360362_n

پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے جنرل سیکرٹری تنویر اشرف کائرہ اور سیکرٹری اطلاعات و نشریات راجہ عامر خان نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن انتخابی قواعد وضوابط کی پابندی یقینی بنانے کے لئے یکساں پیمانہ اپنائے اور کسی کے ساتھ بھی امتیازی سلوک روا نہ رکھے ، پیپلز سیکرٹریٹ پنجاب میں پارٹی عہدیداروں کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کے دوران انہوں نے کہا کہ سابق وزرائے اعظم اور وزرائے اعلی سمیت پیپلز پارٹی کے اہم رہنماؤں کے خلاف اندھا دھند کارروائی جبکہ شریف برادران اور پیپلز پارٹی کے مخالفین پر عنایات کا طرز عمل الیکشن کمیشن کی حیثیت کو متاثر کر رہا ہے جس سے نہ صرف الیکشن کمیشن کی غیر جانبداری پر سوالیہ نشان لگا ہے بلکہ آزادانہ ، منصفانہ انتخابات کے حوالہ سے بھی شکوک و شبہات بڑھ رہے ہیں – پیپلز پارٹی کے رہنماؤں نے کہاکہ پیپلز پارٹی کے اہم رہنماؤں اور مقبول امیدواروں کا راستہ روکا جا رہا ہے جبکہ مخالفین کو نوازا اور تقویت پہنچائی جا رہی ہے جو کسی بھی طور پر مستحسن اور غیر جانبدار چیف الیکشن کمیشن کے منصب کے تقاضوں کے منافی ہے – انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے مقبول امیدواروں کے کاغذات نامزدگی مختلف حیلوں ، بہانوں اور معمولی اعتراضات پر مسترد کئے جا رہے ہیں جبکہ شریف برادران اور ان کے چہیتوں کو ٹھوس دستاویزی ثبوت موجود ہونے کے باوجود الیکشن لڑنے کے لئے اہل قرار دیکر دوہرا معیار اپنایا جا رہا ہے – انہوں نے کہا کہ شریف برادران کے ایسے ” کارہائے نمایاں ” کی تفصیل بہت طویل ہے جن کی بنیاد پر انہیں آئین کے آرٹیکلز 62-63 کے تحت عوامی نمائندگی کے لئے نا اہل قرار دیا جا سکتا ہے تاہم اس سے دانستہ چشم پوشی سارے انتخابی عمل کی شفافیت کو مشکوک بنا رہی ہے – انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن عوام میں تیزی سے گرتی ہوئی ساکھ بچانے کے لئے سب کے ساتھ یکساں سلوک کرے – انہوں نے کہا کہ میاں نواز شریف کے اعلان کردہ اثاثوں اور جمع کرائے گئے مالی گوشواروں میں متعدد تضادات اور غلط بیانیاں موجود ہیں ، انہوں نے سپریم کورٹ کے حکم پر نیب سے رمضان شوگر ملز کے اکاؤنٹ سے واپس ملنے والے 110 ملین روپے کا ذکر نہیں کیا ، انہوں نے 130 ملین روپے کا ذکر تحفے میں ملنے اندراج کیا ہے مگر بیٹے کا نام تک درج نہیں کیا ، اپنی بیٹی مریم صفدر کو دیا گیا 35 ملین روپے کے تحفہ کا بھی ان کے شوہر کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے کاغذات نامزدگی میں کوئی اندراج نہیں کیا گیا – انہوں نے کہا کہ کاغذی خانہ پری کرتے وقت بہت سے جھوٹ درج کئے گئے ہیں جن کا کوئی نوٹس نہیں لیا گیا – انہو ں نے کہا کہ شریف فیملی کے ٹیکس گوشواروں میں بھی بہت سی باتیں چھپائی گئی اور دانستہ غلط بیانی کی گئی ہیں جو آئینی دفعات 62-63 کی سنگین خلاف ورزی ہے ، انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن اور عدلیہ اس صریحا” زیادتی اور دوہرے معیار کا فوری تدارک کرے بصورت دیگر شفاف انتخابات کے حوالہ سے بد اعتمادی ، عوامی اضطراب میں اضافہ ہو گا اور اس سے ملک و قوم کو ناقابل تلافی نقصان پہنچنے کا اندیشہ بڑھ جائے گا – پیپلز پارٹی کے رہنماؤں نے برطانوی اخبار گارڈین کی چشم کشا رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ فرقہ وارانہ انتہا پسندی میں ملوث کالعدم دہشتگرد گروہوں سے شریف برادران کے دیرینہ روابط اب راز نہیں رہے اور بے گناہ شہریوں اور حساس قومی ادارو ں پر خود کش حملوں میں ملوث کالعدم دہشتگرد گروہ لشکر جھنگوی سے انتخابی ڈیل اس کا ناقابل تردید ٹھوس ثبوت ہے ، انہوں نے الیکشن کمیشن اور عدلیہ سے بلا تاخیر ان معاملات کا قرار واقعی نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر معاملات کی اصلاح نہ کی گئی تو ملک و قوم کو پہنچنے والے ناقابل تلافی نقصان کی ذمہ داری الیکشن کمیشن اور عدلیہ پر عائد ہو گی –

اپنا تبصرہ بھیجیں