ن لیگ پنجاب حکومت نے اپنے پانچ سالہ دور حکومت میں وفاقی حکومت سے ملنے والے 2500 ارب روپے اپنے اللے تللوں ، سستی روٹی سکیم ، آشیانہ ہاؤسنگ سکیم ، دانش سکول ، لیپ ٹاپ اور 70 ارب روپے جنگلہ بس سروس پر خرچ کر کے غریب عوام کو ہسپتالوں میں ایڑیاں رگڑ رگڑ کر مرنے پر مجبور کر دیا

534378_158364807634616_2104032123_n

پاکستان پیپلز پارٹی کے نائب صدر عزیز الرحمان چن ، طارق گجر اور سیکرٹری اطلاعات و نشریات راجہ عامر خان نے کہا ہے کہ خسرہ جیسی بیماری سے پنجاب میں آج کے جدید دور میں کمسن بچوں کی ہلاکتیں ” شوباز” شریف کی شوباز پالیسیوں کا نتیجہ ہیں -پیپلز سیکرٹریٹ میں پارٹی اجلاس کے دوران پیپلز پارٹی کے رہنماؤں نے کہاکہ ن لیگ پنجاب حکومت نے اپنے پانچ سالہ دور حکومت میں وفاقی حکومت سے ملنے والے 2500 ارب روپے اپنے اللے تللوں ، سستی روٹی سکیم ، آشیانہ ہاؤسنگ سکیم ، دانش سکول ، لیپ ٹاپ اور 70 ارب روپے جنگلہ بس سروس پر خرچ کر کے غریب عوام کو ہسپتالوں میں ایڑیاں رگڑ رگڑ کر مرنے پر مجبور کر دیا – انہوں نے کہا کہ14 برس سے تعلطل کے شکار این ایف سی ایوارڈ کااعلان پیپلز پارٹی حکومت کا ایک ایسا تاریخی کارنامہ ہے جس کی جتنی بھی تعریف کی جائے کم ہے – اس این ایف سی ایوارڈ کے تحت وفاق سے چاروں صوبوں کو اتفاق رائے سے ہر سال اتنی رقوم ملی ہیں کہ وہ با آسانی اپنے بجٹ بنا کر عوام کی خدمت کر سکتی تھیں – گذشتہ سال بھی پنجاب کو وفاق سے 576 ارب روپے کے فنڈ ملے مگر بدقسمتی سے یہاں پر موجود وزیر اعلی شو باز شریف نے سستی شہرت کے لئے سارا پیسہ لاہور کی سڑکوں اور پلوں پر پانی کی طرح بہا کر ضائع کر دیا – پنجاب حکومت کے ان شاہانہ اخراجات کے باعث پورے صوبے کے باقی 36 اضلاع نہ صرف نظر انداز ہوئے بلکہ تعلیم ، صحت اور دیگر شعبہ زندگی متاثر ہو کر رہ گئے – انہوں نے کہا کہ آج اگر لاکھوں بچے بغیر چھتوں اور دیواروں کے سکولوں میں پڑھنے پر مجبور ہیں اور لاہور سمیت پورے پنجاب کے ہسپتالوں میں بچے خسرہ جیسی بیماریوں سے مر رہے ہیں – تو اس کی اصل وجہ یہ ہے کہ شہباز حکومت نے صوبے میں فلاحی شعبوں کے لئے آٹے میں نمک کے برابر فنڈ مختص کئے آج لوگوں کو ہسپتالوں میں ادویات تک میسر نہیں ہیں – انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی پنجاب میں 77 ء کے بعد پہلی مرتبہ الیکشن جیت کر حکومت بنائے گی اور عوام کو مفت تعلیم اور مفت طبی سہولتوں کی فراہمی کے لئے صوبائی بجٹ کا بڑا حصہ مختص کرے گی – انہوں نے کہا کہ پنجاب میں لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ بھی ہماری ترجیح میں شامل ہو گا اس مقصد کے لئے پیپلز پارٹی کی پنجاب حکومت صوبے کے بجٹ سے بجلی پیدا کرنے کے بڑے منصوبے تعمیر کرے گی – ہم شہباز شریف کی طرح مینار پاکستان کے سائے تلے کیمپ لگا کر ہاتھ پر ہاتھ دھرے نہیں بیٹھیں گے ، عملی کام کریں گے اور بجلی بحران پر قابو پائیں گے –

اپنا تبصرہ بھیجیں