ہمیں ایک قوم بن کر ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی تجاویز پر عمل کرتے ہوئے وہ اقدامات فوری طور پر اٹھانے ہیں جن سے عوام کی جانوں کا تحفظ یقینی بنایا جاسکے: بلاول بھٹو زرداری


لاہور/کراچی/اسلام آباد: چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے ایکسپریس نیوز کے پروگرام کل تک میں معروف اینکر جاوید چوہدری کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہمیں ایک قوم بن کر ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی تجاویز پر عمل کرتے ہوئے وہ اقدامات فوری طور پر اٹھانے ہیں جن سے عوام کی جانوں کا تحفظ یقینی بنایا جاسکے۔


چئیرمین بلاول نے کہا کہ عالمی وباء کے دوران وفاقی حکومت میں ہوتے ہوئے بیان بازی اور سیاسی اسکورنگ کرنا ایک شرم ناک عمل ہے۔
سندھ حکومت اس وقت کورونا وائرس کا مقابلہ کررہی ہے جبکہ وفاقی وزراء کورونا کے بجائے سندھ حکومت سے لڑ رہے ہیں۔


انہوں نے کہا کہ چاہے کشمیر کی بات ہو، قومی اقتصادی معاملات ہوں، یا کورونا وائرس جیسی عالمی وبا، وزیراعظم کی کسی مسئلے پر بھی توجہ نہیں، جسکی بڑی وجہ وزیراعظم کی انا ہے، اور اسی کے سبب ملک اب تک قومی اتحاد کے بجائے اکائیوں میں تقسیم ہے۔


چئیرمین بلاول کا کہنا ہے کہ ہمیں اس وقت جنگی بنیادوں پر اپنی طبی سہولیات میں اضافہ کرنا ہے اور ہم پہلے دن سے ہی اپنے محدود وسائل کو استعمال کر کے ان میں اضافہ کی کوشش کر رہے ہیں لیکن کوئی بھی صوبے یہ اکیلا نہیں کرسکتا۔


انہوں نے بتایا کہ اس وقت حکومتِ سندھ کی اولین ترجیح عوام کو تحفظ دینا ہے۔
حکومت کے جو کارٹونز وزیر اعلی کے خلاف نکلے ہیں، یہ انکا مقصد عوام کی مشکلات حل کرنا نہیں بلکہ سیاسی اسکورنگ اور وزیر اعلیٰ کو گالی دینا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں