Massive rigging in NA-118 to defeat PPP candidate Faraz Hashmi -by Syed Ahsan Abbas Rizvi

390727_453464211403585_1436484736_n

A key constituency in Lahore, NA-118 has been the stronghold of Pakistan Peoples Party and political pundit was declaring Asif Hashmi’s son Faraz Hashmi the most favorite and winning candidate for this important National Assembly seat in the 2013 General Election.

But huge rigging was made during the 2013 general elections in NA-118 to defeat the PPP’s strongest candidate Faraz Hashmi.

It should be remembered that Asif Hashmi had given jobs to more than 27 hundred poor people. Shahdara residents take a sigh of relief when he shifted the Ravi toll plaza outside the Lahore city. He installed dozens of water filtration plant. Besides this he has done a lot of social welfare projects for this constituency and therefore election observers were declaring NA-118 the PPP’s seat.

In NA-118 all organizations run on the basis of Baradari-ism, trade unions, and all sects based organizations including Ahle Tashi had announced their full support to Faraz Hashmi. Imran Khan is crying on the defeat of his candidate Hamid Zaman who was just entered in NA-118’s politics a few weeks before. In fact bags Imran Khan continuously refers were the PPP’s candidate Faraz Hashmi’s votes bags, but through huge rigging he was in third position.

این اے ١١٨ پاکستان پیپلز پارٹی کا مضبوط حلقہ تھا جس میں سیاسی پنڈت آصف ہاشمی کے صاحبزادے فراز ہاشمی کو فیورٹ قرار دے رہے تھے۔ الیکشن ٢٠١٣ این اے ١١٨ میں دھاندلی کرکے پاکستان پیپلز پارٹی کے اُمیدوار کو ہرایا گیا۔
یاد رہے کہ این اے ١١٨ میں آصف ہاشمی نے ستائیس سو سے زائد نوکریاں دی۔نہ صرف یہ بلکہ شاہدرہ ٹول ٹیکس پلازہ کو شاہدرہ لاہور سے باہر مُنتقل کرواکے این اے ١١٨ کے مکینوں کا دیرینہ مطالبہ پُورا کیا ۔ درجنوں کی تعداد میں واٹر فلٹریشن پلانٹ نصب کئے جانے کے علاوہ آصف ہاشمی نے اَن گنت ایسے کام کروائے جس کی بنیاد پر سیاسی پنڈت اسے پیپلز پارٹی کی سیٹ قرار دیتے تھے۔
این اے ١١٨ میں موجود تمام برادری ازم پر چلنے والی تنظیموں، ٹریڈرز یونین اور دیگر مسلکی تنظیموں کے علاوہ اہلِ تشیع تنظیموں نے بھی آصف ہاشمی کے بیٹے فراز ہاشمی کی مکمل حمایت کا اعلان کیا تھا۔
عمران خان جس حامد زمان این اے ١١٨ کی ہار کا رونا رو رہے ہیں وہ این اے ١١٨ میں الیکشن ٢٠١٣ سے چند ہفتے قبل نازل ہوئے۔حقیقت میں جن بیگز کا ذکر عمران خان نے کیا وہ پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار فراز ہاشمی کے ووٹ کے بیگ تھے جنہیں تیسری پوزیشن تک محدود کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں