باہمی اختلافات بالائے طاق رکھتے ہوئے سب کو ملکر ملک و قوم کی ترقی کی راہ پر گامزن کرنا ہو گا : میاں منظور احمد وٹو

188822_230257290445367_72184262_n
پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما اور سابق وفاقی وزیر میاں منظور احمد وٹو نے پنجاب میں پیپلز پارٹی کی انتخابی شکست کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کی صدارت سے مستعفی ہونے کا باضابطہ اعلان کر دیا – اپنی رہائشگاہ پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ صاف شفاف انتخابات کرانے پر الیکشن کمیشن اور پاکستانی عوام کو مبارکباد پیش کرتے ہیں انہوں نے جیتنے والی جماعتوں کو بھی مبارکباد پیش کی اور کہا کہ باہمی اختلافات بالائے طاق رکھتے ہوئے سب کو ملکر ملک و قوم کی ترقی کی راہ پر گامزن کرنا ہو گا – میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ انتخابات میں ایک بہت ہی مستحسن چیز یہ سامنے آئی ہے کہ عوام نے انفرادی طور پر ہر کسی امیدوار کے بجائے پارٹی ، نظرئیے اور منشور کو ووٹ دئیے جو بہت ہی خوش آئند بات ہے – انہوں نے کہاکہ انہیں چھ ماہ قبل پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کا صدر بنایا گیا تھا وہ انتخابی نتائج کو تسلیم کرتے ہیں اور اپنی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے مستعفی ہو رہے ہیں – انہوں نے کہا کہ انہوں نے اپنا استعفی پارٹی قیادت کو بھجوادیا ہے تاہم وہ صرف عہدہ چھوڑ رہے ہیں پارٹی نہیں ، انہو ں نے کارکن کی حیثیت سے پارٹی کے ساتھ رہنے کا عزم ظاہر کیا – میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے جمہوریت کے لئے بیش قیمت قربانیاں دیں اور جمہوری استحکام کے لئے حالیہ عام انتخابات کو صاف شفاف اور منصفانہ بنانے کے لئے میکنزم بھی پیپلز پارٹی نے بنایا تھا ، الیکشن کمیشن کو خود مختار ادارہ بنایا گیا – انہوں نے کہا کہ انتخابی نتائج کے حوالہ سے یہ بات بہت تشویشناک ہے کہ ہر صوبے میں الگ الگ جماعت کو مینڈیٹ ملا ہے جبکہ موجودہ ملکی صورتحال اس امر کی متقاضی تھی کہ پیپلز پارٹی ، ن لیگ اور تحریک انصاف جیسی قومی جماعتوں کو چاروں صوبوں میں نشستیں حاصل ہوتیں – ہر صوبے میں الگ نظریات کی حامل حکومت بننا خطرناک ہو گا جس سے وفاق کے لئے خدشات بڑھیں گے – انہوں نے کہا کہ ہم اپنی غلطیوں کی اصلاح کریں گے اور پیپلز پارٹی کو نئے سرے سے منظم کیا جائے گا – میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی عوام کو کبھی تنہا نہیں چھوڑے گی اور اہم قومی امور میں بطور اپوزیشن اپنی ذمہ داریاں بطریق احسن نبھائے گی – انہوں نے عام انتخابات کے حوالہ سے رائے دہندگان اور میڈیا کے کردار کو بھی سراہا –

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں