بجٹ کے ذریعے مہنگائی کا نہ رکنے والا طوفان پیدا ہوگا: پیپلز پارٹی پنجاب

IMG_6769

لاہور: پاکستان پیپلزپارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو‘ جنرل سیکرٹری تنویر اشرف کائرہ ، سیکرٹری اطلاعات و نشریات راجہ عامر خان‘ نے بجٹ پر اپنے ردعمل کے اظہار میں اسے ایک فرضی ‘ لفظوں کا ہیر پھیر والا بجٹ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے کبھی بھی سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہیں کیا ہے بلکہ جب پیپلز پارٹی کی حکومت نے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کیا تھا تو تب بھی انہوں نے اس کی بھرپور مخالفت کی تھی جس کی ہم مذمت کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ بجٹ میں عام آدمی کو ریلیف دینے کی بجائے اس کی مشکلات میں اضافہ کردیا گیا ہے اور گلی محلوں میں بچوں کے لئے روزی کمانے والے ایک پرچون فروش پر ٹیکس لگا کر مہنگائی کا طوفان برپا کرنے کی بنیاد رکھ دی گئی ہے جبکہ ریلوے جیسے قومی ادارے کو کارپوریشن بنانے کا اعلان کرکے اور اس کی بحالی کے لئے آئیندہ مالی سال میں رقم بڑھانے کا اعلان کرکے (ن) لیگ نے واضح کردیا ہے کہ اس کی مستقبل کی کیا ترجیحات ہونا تو ےہ چاہئے تھا کہ ابھی سے ریلوے کو بحران سے نکالنے کے لئے ہنگامی اقدامات کا اعلان کیا جاتا ۔انہوں نے کہا کہ الیکشن کے وقت تو بجلی کے بحران کو ختم کرنے کے لئے مسلم لیگ (ن)کی حکومت نے بڑے بڑے دعوے کئے تھے لیکن بجٹ کے اندر بجلی کے بحران کے حوالے سے جو اعلانات کئے گئے ہیں اور اس کے لئے جو رقم رکھی گئی ہے اس سے ےہ بات ثابت ہوتی ہے کہ بجلی کا بحران ختم کرنے میں بھی بری طرح سے ناکام ہوں گے ۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے لئے کسی پر ٹیکس نہیں لگایا تھا بلکہ غیر ملکی بینکوں نے اسے عوامی مفاد کا پروگرام تسلیم کرکے اس کے لئے رقم مہیا کی تھی لیکن مسلم لیگ (ن) نے پہلے تو اس کا نام ہی تبدیل کردیا جس کی ہم پر زور مذمت کرتے ہیں اور مطالبہ کرتے ہیں کہ اس کا نام بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام ہی رکھا جائے ۔انہوں نے کہا کہ بجٹ میں عوام کو بےو قوف بنا نے کی کوشش کی گئی ہے اور انکی امیدوں پر پانی پھیرا گیا ہے ےہ بجٹ غریب عوام بالخصو ص سرکاری ملازمین کے لئے ایک سیاہ بجٹ سے کم بجٹ ثابت نہیں ہو گا اور اس بجٹ کے زریعے سے مہنگائی کا ایک نہ رکنے والا طوفان پیدا ہو گا جس کو روکنا کسی کے بس میں بھی نہیں ہوگا۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں