قائداعظم کی رہائشگاہ پر حملہ ایسے ہی ہے جیسے پاکستان پر حملہ ہے: میاں منظور احمد وٹو

1003833_271370693000693_452391308_n

پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر اور سابق وفاقی وزیر میاں منظور احمد وٹو نے کوئٹہ میں ہونے والے واقعات کی شدید مزمت کی ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ دہشتگردی کا واقعہ پاکستان کی تاریخ کے سب سے گھناونے واقعات میں سے ہے۔انہوں نے کہاقائداعظم کی رہائشگاہ پر حملہ ایسے ہی ہے جیسے پاکستان پر حملہ ہے۔کوئٹہ کی ریزیڈنسی پاکستان کی شناخت تھی۔اور پاکستان کی شناخت کو ختم کرنے کے لئے یہ کوشش کی گئی ہے۔انہوں نے کہاقائداعظم محمد علی جناح خود اس میں رہتے رہے ہیں اور ان کی ذات سے کسی کو اختلاف نہیں ہے۔انہوں نے کہا یہ وہ شخصیت ہیں جنہوں نے پاکستان کو بنایا اور ہمیں آزادی دلوائی۔اور ان کی آخری رہائشگاہ پر حملہ ایک قومی عالمیہ ہے۔انہوں نے کہا اب سب سیاسی جماعتوں کو مل کر جودہشتگرد اس کے ذمہ دار ہیں ان کا سدباب کرنا چاہیے اور ان کو شکست دینی چاہیے۔انہوں نے کہا بولان میڈیکل کی بس پر حملہ جس میں معصوم بچیاں سوار تھیں ۔اور اس کے بعد ہسپتال جہاں پر ان کو زخمی حالت میں لے کر جایا جا رہا تھاحملہ بہت ہی افسوسناک اور بہت بڑا المیہ ہے۔انہوں نے کہایہ موجودہ حکومت کے لئے پوری دنیا میں ذلت کا باعث بھی ہے۔انہوں نے کہاپاکستان پیپلز پارٹی ماضی میں اور مستقبل میں بھی ان دہشتگردوں کے خلاف موجودہ حکومت سے ہر طرح کا تعاون کرنے کے لئے تیار ہے۔اور جو لوگ ان واقعات کے ذمہ دار ہیں ان کو سزادینے کے لئے ہر طرح کا تعاون کرنے کے لئے آج بھی تیار ہے۔انہوں نے کہاپیپلز پارٹی نے ماضی میں بھی ملک دشمن عناصر کا مقابلہ کیا ہے اوربڑی سے بڑی قربانی سے دریغ نہیں کیاتو وہ اب بھی ان لوگوں کا مقابلہ کرنے کے لئے تیار ہے۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں