جب ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل سٹاف محفوظ نہیں ہے تو بچے کیسے محفوظ رہ سکے گے: ڈاکٹر شازیہ ثوبیہ اسلم

جمعہ کو قومی اسمبلی کے اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے ڈاکٹر شازیہ ثوبیہ اسلم نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی آبادی کا 51 فیصد خواتین ہیں اور سب سے ذیادہ خواتین کے لحاظ تعلیمی گیپ خیبر پختون خواہ میں ہے،جہاں آپکی حکومت پچھلے 7 سال سے بر سر اقتدار ہے۔
انہوں نے کہاکہ وزیر صاحب کہتے ہیں کہ ہم سکول کھولنے کا سوچ رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ اسلام آباد کے 10 سیکٹرز میں لاک ڈاون ہے،اس حوالے آپ نے کیا پالیسی بنائی ہے،جب ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل سٹاف محفوظ نہیں ہے تو بچے کیسے محفوظ رہ سکے گے،بچوں کو محفوظ بنانے کے لیے کیا پالیسی بنائی گئی ہے۔آن لائن ایجوکیشن با لکل بیکار ہے،آپ کی تعلیم کے حوالے سے تمام تر جھوٹ ہیں،یا تو آپ سوشل میڈیا پر چل سکتے ہیں یا اس جھوٹ پر ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں