چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور سردار اختر مینگل کا سیاسی صورتحال ، کورونا وائرس اور ٹڈی دَل کے معاملات پر تبادلہ خیال

اسلام آباد: چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ سردار اختر مینگل کو فون کرکے ملک کی سیاسی صورتحال ، کورونا وائرس اور ٹڈی دَل کے معاملات پر تبادلہ خیال کیا۔

سردار اخترمینگل سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ پی ٹی آئی ایم ایف بجٹ عوام دشمن بجٹ ہے۔ ہم اسے کسی صورت نہیں مان سکتے۔ دوسری طرف اٹھارہویں آئینی ترمیم پر تنقید کرے عمران خان ملک کے دستور پر حملے کر رہے ہیں۔ حکومت کی نااہلی کی وجہ سے آج کورونا وائرس بھی ہر جگہ پھیل چکا ہے۔

دونوں رہنماﺅں نے ملک میں کورونا وائرس کے پھیلاﺅپر انتہائی تشویش کا اظہار کیا۔ چیئرمین پیپلزپارٹی اور سردار اختر مینگل کے درمیان این ایف سی ایوارڈ کے حوالے سے بھی حکومتی اقدامات پر گفتگو ہوئی۔ گفتگو کے دوران دونوں رہنماﺅں کے درمیان بجٹ پر مشترکہ حکمت عملی پر اتفاق ہوا۔ بلاول بھٹو زرداری نے بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ سے آئندہ ہفتے بلائی جانے والی اے پی سی کے حوالے سے بھی مشاورت کی۔

اس کے علاوہ چیئرمین پیپلزپارٹی نے پٹرولیم کی مصنوعات کی قیمتوں میں غیرمعمولی اضافے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسے وقت جب عوام کو ریلیف دینے کی ضرورت تھی پٹرول مہنگا کرکے غریب عوام سے دشمنی کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام کی جیبوں پر ڈاکہ ڈال کر عمران خان اپنی نااہلی کی وجہ سے ڈوبتی ہوئی معیشت کو سہارا نہیں دے سکتے۔ عمران خان نے پہلے پٹرول سستا کروا کر ذخیرہ کروایا اور پھر مہنگا کرکے مافیا کو فائدہ پہنچایا۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ سلیکٹڈ وزیراعظم کو عام آدمی کی کوئی فکر نہیں ہے۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پٹرول سستا ہونے سے ضروریات زندگی کی اشیاءسستی نہیں ہوئیں مگر پٹرول مہنگا ہونے سے مہنگائی مزید بڑھے گی۔ انہوں نے کہا کہ سلیکٹڈ وزیراعظم کے اقتدار کا ایک ایک دن عوام کی مشکلات میں بے پناہ اضافہ کر رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں