شریف بردران چائنہ کی سیر کر کے واپس آ گئے ہیں یہ ان کی فیملی ہولی ڈے پکنک تھی: راجہ عامرخان

IMG_4847

پاکستان پیپلزپارٹی پنجاب کے سیکریٹری اطلاعات راجہ عامرخان نے کہا ہے کہ شریف بردران چائنہ کی سیر کر کے واپس آ گئے ہیں یہ ان کی فیملی ہولی ڈے پکنک تھی۔انھوں نے کہاکہ جتنے بھی منصوبے باشمول بلٹ ٹرین ،اینڈ ر گراؤ نڈ ٹرین یا میٹرو بس وغیرہ وغیرہ کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔انھوں نے کہاکہ ہمارے ملک میں لوگوں کو ضروریات زندگی کے مسائل درپیش ہیں انھوں نے کہا کہ یہاں پر سرکاری سکولوں میں ٹیچر ز نہیں ہیں ،ہسپتالوں میں دوائیاں نہیں ہیں۔پولیس کے پاس اسلحہ بارود نہیں ہے۔انھوں نے کہا کہ نوبت یہاں تک پہینچ گئی ہے کہ ڈاکوؤ ں نے پولیس والوں کو یرغمال بنایا ہوا ہے۔انھوں نے کہا ہے کہ پچھلے تین دن سے پوری پنجاب حکومت کی کوششوں کے باوجودڈاکوں سے پولیس والوں کو چھوڑانے میں ناکام ہیں۔انھوں نے کہا ہے کہ ایسے حالات میں افسانوی منصوبوں پر ملک وقوم کے پیسے خرچ کرنے زیادتی ہو گی۔انھوں نے کہا کہ یہاں پر ایک روٹ پر میٹرو بس تو چلا دی ہے ۔مگر ان روٹوں کی طرف دیکھناچاہیے جہاں پر گھنٹوں کوئی ٹرانسپورٹ نہیں آتی اور لوگ بسوں ویگنوں کی چھتوں پر بیٹھ کر اور ان سے لٹک کر سفر کرتے ہیں۔انھوں نے کہا ہے کہ ان سکولوں کی طرف دیکھنا چاہیے جہاں پر نہ استاد ہیں نہ کتابیں ہیں اور لوگوں کو لیپ ٹاپ کے خواب دیکھائے جا رہے ہیں۔انھوں نے کہا ہے کہ ہم حکومت سے پوچھتے ہیں کہ وزیر اعظم ،وزیر اعلی اپنے بچوں حسین نواز اور سلیمان شہباز کو سرکاری دوروں پر کس کھاتے میں ساتھ لے کر جاتے ہیں اور یہ کس حیثیت سے ملک میں اور ملک سے باہر سرکاری میٹنگز میں شامل ہوتے ہیں ۔انھو ں نے کہا ہے کہ یہ پاکستان ہے کوئی میاں برادران کی ذاتی فیکٹری یا کاروبار نہیں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں