میاں منظور وٹو اور تنویر اشرف کائرہ کی افواج پاکستان کو وزیرستان آپریشن فیز (1) کامیابی سے مکمل کرنے پر مبارکباد

1977403_377250419079386_233398149_n

صدر پنجاب پیپلز پارٹی میاں منظور احمد وٹو اور سیکرٹری جنرل تنویر اشرف کائرہ نے افواج پاکستان کو وزیرستان آپریشن فیز (1)کو کامیابی سے مکمل کرنے پر مبارکباد دی ہے۔ آج پارٹی سیکرٹیریٹ سے جاری مشترکہ بیان میں انہوں نے اسکا اظہار کیا ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ تمام قوم بہادر فوجی جوانوں کے پیچھے کھڑی ہے جو ریاست کی رٹ کو قائم کرنے کے لیے دہشتگردوں کے خلاف بہادری سے لڑ رہے ہیں جنہوں نے ملک کی سلامتی، ہمارے طرز زندگی اور آئین پاکستان کے لیے سنگین خطرات پید اکر دئیے ہیں۔ میاں منظور احمد وٹو نے مزید کہا کہ ملٹری آپریشن کی کامیابی ناگزیر تھی اگرچہ اسکو دیر سے شروع کرنے کی وجہ سے قوم کو نقصان اٹھانا پڑا۔ انہوں نے کہا کہ اگر طالبان سے مذاکرات پر وقت ضائع کرنے کی بجائے یہ ملٹری آپریشن پہلے شروع کیا جاتا تو جناح انٹرنیشنل کراچی اےئرپورٹ اور پشاور اےئرپورٹ پر دہشتگردی کے حملوں سے بچا جا سکتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ملٹری آپریشن چےئرمین بلاول بھٹو کے موقف کی تائید ہے جو شروع دن سے کہہ رہے تھے کہ انکے خلاف طاقت استعمال کی جائے کیونکہ یہ لوگ شائستگی اور رواداری کی زبان سمجھنے سے قاصر ہیں۔ تنویر اشرف کائرہ نے اپنے پیغام میں کہا کہ بہادر فوجی جوان قوم کے زبردست خراج عقیدت کے مستحق ہیں جنہوں نے وزیرستان میں کمال کامیابیاں حاصل کی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ وزیرستان آپریشن میں فیز (1) کی کامیابی پاکستانی قوم کے لیے بڑی اچھی خبر ہے ایسی خبروں کے لیے وہ کئی سالوں سے ترس رہے ہیں۔ انہوں نے سوال کیا کہ جو وقت مذاکرات میں اس حکومت نے ضائع کیا ہے اور جس سے کئی سویلین اور فوجی شہید ہوئے ہیں اُنکے خون کا کون ذمہ دار ہے۔ انہوں نے کہا کہ طالبان حکومت سے ایک حکمت عملی کے تحت مذاکرات کر رہے تھے تاکہ انکو زیادہ وقت ملے اور وہ اپنے آپکو منظم کر سکیں ۔لیکن افسوس ہے کہ اس بات کی حکومت کو سمجھ نہ آئی۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ وزیرستان میں ملٹری آپریشن بلاول بھٹو کے موقف کی توثیق ہے جنکی شروع دن سے ہی دہشتگردوں کے خلاف طاقت کے استعمال کی حامی تھی کیونکہ دہشتگرداسکے علاوہ کوئی اور زبان نہیں سمجھتے۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں