پیپلز پارٹی مقررہ مدت سے پہلے ایجی ٹیشن کے ذریعے حکومت کی تبدیلی کے حق میں: میاں منظور احمد وٹو

537d7b2a07281

پاکستان پیپلز پارٹی مقررہ مدت سے پہلے ایجی ٹیشن کے ذریعے حکومت کی تبدیلی کے حق میں نہیں ہے۔ یہ بات میاں منظور احمد وٹو صدر پنجاب پیپلز پارٹی نے جناب شفقت تنویر ، صدر پیپلز پارٹی یو ایس اے، اور دوسرے کارکنوں سے نیویارک میں باتیں کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ محاذ آرئی ، الزام تراشی، ذاتیات اور سیاسی اختلافات کو بڑھا چڑھا کر پیش کرنے کی وجہ سے پاکستان کو ماضی میں بھاری قیمت ادا کرنا پڑی ہے جسکی وجہ سے وفاق پاکستان ، جمہوریت کے تسلسل اور قومی اتحاد کو سنگین نقصان پہنچا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ سمجھداری اور رواداری سے کام لیا جائے کیونکہ اب پاکستان محاذآرائی کی سیاست کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی مشکل حالات میں جمہوریت کی حمایت کر رہی ہے اسکے باوجودہ کہ اسکو موجودہ حکومت کی ’’بی ٹیم‘‘ کے الزام کا بھی سامنا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی جمہوریت کے تحفظ کے اعلیٰ مقصد کے لیے کوشاں ہے اور الزام تراشیاں اور مشکل حالات پیپلز پارٹی کو اپنے مقصد کو حاصل کرنے سے روک نہیں سکتے۔ اس ضمن میں پیپلز پارٹی کا موقف بہت واضح ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں اگرچہ سیاستدانوں کی غلطیاں مسلمہ حقیت ہے لیکن بعض ریاستی اداروں کی غیر آئینی اور غیر قانونی مداخلت نے بھی قوم کے لیے بے پناہ مشکلات پیدا کی ہیں جسکی وجہ سے ملک میں جمہوریت پٹڑی سے اُتری اور ملک تنزلی کا شکار رہا۔انہوں نے کہا کہ جمہوریت، سیاسی استحکام اور سماجی ترقی کا آپس میں چولی دامن کا ساتھ ہے۔انہوں نے کہا کہ ستم ظریفی یہ ہے کہ ماضی میں حکومتوں نے پہلی حکومت کے خلاف انتقامی کارروائیوں کا سلسلہ شروع کر دیتی تھی اور چاہتی تھی کہ پہلی حکومت کے تمام نشانات کو مٹا کر اپنی حکمرانی کو طول دیا جائے۔ انہوں نے عوام کی ترقی کی بجائے اپنی تمام تر توانائیاں اپنی پیش راؤ حکومت پر بلاوجہ صرف کیں جسکی وجہ سے وہ نہ تو گڈ گورننس دے سکے اور نہ ہی عوام کو صحت، تعلیم، روزگار اور دوسری شہری سہولتیں مہیا کرسکیں۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ اب سیاستدانوں کو دوراندیشی کا ثبوت دیتے ہوئے ایک دوسرے پر کیچڑ اچھالنے سے اجتناب کرنا چاہیے کیونکہ اسوقت ملک حالت جنگ میں ہے اور ہمارے بہادر فوجی دہشتگروں کو ختم کرنے کے درپہ ہیں۔پیپلز پارٹی اور اسکی قیادت اُنکے پیچھے سیسہ پلائی دیوار کی طرح کھڑی ہے۔ یاد رہے کہ میاں منظور احمد وٹو آجکل نیویارک میں ہیں جہاں پر اُنکا طبی معائنہ ڈاکٹر محمد یوسف سندھو، ماہر امراض قلب اور ڈاکٹر محمد زبیر، ایم ڈی فیزیشن ،جو کہ نیویارک کے مشہور ڈاکٹر ہیں انہوں نے وٹو صاحب کا طبی معائنہ کیا اور انہیں مکمل صحتیاب قرار دیا۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں