Tanvir Ashraf Kaira demands that PM should return to country soon

12-22-2010_7515_l_u
Prime Minister Nawaz Sharif is away on foreign tour for about two weeks suggesting that pressing problems facing the country at present do not deserve his constant attention and physical presence in the country, said Tanvir Ashraf Kaira, Secretary General PPP, Punjab, in a statement issued from the Party Secretariat here today.

This cannot be justified when the country is in a state of war because the scourge of terrorism and extremism is a grave threat to the security of the country, he added.

He said that Pakistan was fighting the war of its survival and its Prime Minister’s absence from the country for a longer period of time could not be condoned by any measure.

He said that the performance of the religious rituals were important but he should return to the country after couple of days and give direction to deal with the situation as the country was fighting a war that needed his presence to take immediate important decisions having beatings on the ongoing military operation.

His departure for reported two weeks to a foreign country gives the impression of his abdication of responsibilities to very important national issues with deep rooted implications for the security of the country, he opined.

He suggested that the Prime Minister should cut short his visit and come back to Pakistan and assume the leading role of taking decisions because he was the elected Prime Minister of Pakistan accountable to the people and the Parliament.

Some of the political parties are standing up to challenge the legitimacy of the government and the Prime Minister is required to reach out to them for the redressal of their grievances instead of turning his blind away that is not going to work in the democratic culture, maintained Tanvir Ashraf Kaira.

He said that the issue of the IDPs, load shedding of electricity, poverty and non-availibility of civic amenities to the people had made their lives miserable and the Chief Executive was required to assure them with full seriousness that he was cognizant of their plight and was taking concrete steps to mitigate their sufferings.

Prime Minister’s absence from the country will not bode well for the people whose hopes of better days during this government are dwindling fast, he observed.

پاکستا ن کے وزیر اعظم کا دو ہفتے کا غیرملکی دورہ انکی ملکی معاملا ت کی فہمی کی عدمِ سنگینی کی طرف اشارہ کرتا ہے۔ یہ بات سیکرٹری جنرل تنویر اشرف کائرہ نے آج یہا ں سے جاری ایک بیان میں کہی۔انہو ں نے کہا کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ وزیراعظم کے نزدیک ملک کو درپیش سنگین مسائل انکی ترجیحات میں نہیں ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایسا رویہ کسی لحاظ سے بھی جائز نہیں جبکہ پاکستان کو دہشتگردی اور انتہا پسندی جیسے سنگین خطرات لاحق ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مذہبی رسومات کی ادائیگی اگرچہ اہم ہے لیکن وزیراعظم کو چاہیے کہ وہ جلد از جلد وطن واپس آئیں کیونکہ دہشتگردی کے خلاف آپریشن کے ضمن میں انکی موجودگی ملک میں اشد ضروری ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ انکے غیر ملکی دورے سے یہ تاثر عام ہو رہا ہے کہ انہوں نے دہشتگردی اور دوسرے سیکیورٹی مسائل سے لاتعلقی کا اظہار ہوتا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ وزیراعظم دور ہ مختصر کر کے وطن واپس آجائیں اور ایک وزیراعظم کی حیثیت سے وہ ملکی معاملات میں کلیدی کردار ادا کریں کیونکہ وہ قوم اور پارلیمنٹ کو جواب دہ ہیں۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ پہلے ہی کچھ سیاسی جماعتیں انکے حکومت کرنے کے جواز کو چیلنج کر رہی ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ وزیراعظم ان سے مذاکرات کر کے انکی شکایات کا جلد از جلد ازلہ کریں تا کہ ملک میں اتحاد کی فضاء قائم کی جا سکے۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ ملک میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کا عذاب، مہنگائی، سنگین جرائم میں اضافہ اور شہری سہولتو ں کے فقدان نے لوگو ں کا جینا حرا م کر دیا ہے ۔ وزیراعظم کو چاہیے کہ وہ پوری سنجیدگی سے لوگوں کو باور کرائیں کہ حکومت انکے مصائب کم کرنے میں ہر ممکن کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اب عوام میں یہ تاثر بڑی تیزی سے پیدا ہو رہا ہے کہ حکومت انکے مسائل کو حل کرنے میں ناکام رہی ہے ۔ لوگ مایوس ہو رہے ہیں، انہوں نے مزید کہا۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں