Mian Manzoor Ahmed Wattoo urges govt to end deadlock

218860_l
The government should immediately move to end the emerging dangerous political deadlock in the country said Mian manzoor Ahmed Wattoo, President Punjab PPP, in a statement issued from the Party Secretariat here today.

He warned that delay on the part of the government in this regard would nudge the situation to the point of no return filled with dangers to democracy. He added if the political system is derailed the whole responsibility will be on the shoulders of the incumbent government.

He observed that the government had number of options to defuse the situation but one failed to understand as why its mandarins were not appreciating the gravity of the situation. The government leaders should open dialogue with the PTI even if it has to resort to door crashing for this purpose, he urged.

He said that the government should also reach out to the rest of political parties with a view to handle the situation because they were also the stake holders in the system. They are genuinely worried over the situation which has been going from bad to worse, he stated.

Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that the government should desist from using the petty tactics of pre-emptive arrests of the leadership of the political parties those were contemplating to protest on August 14 for acceptance of their demands. Such actions will further isolate the government, he observed.

He cautioned that the third time pre-mature dismissal of the PML(N) government having comfortable majority would seal its political fate in the future as it would establish the fact of their inability to get along with other political forces in a spirit of reconciliation and accommodation.

He expressed his dismay over the reluctance of the government in accepting the demands of the PTI that in turn had permeated the impression that the government was hiding something of highly objectionable nature.

He also called upon the PTI leadership to take deep breadeth and play its role in the Parliamentary Reforms Committee formulated to plug the holes in the electoral system.

He reaffirmed that the PPP would defend democracy at all cost adding rights of the people of Pakistan were the most precious politics close to the manifesto of the Party.

لاہور 3اگست ،2014
پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے حکومت سے فورًا سیاسی ڈیڈلاک کو ختم کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ حالات بڑی تیزی سے ناقابل واپسی پوائنٹ کی طرف بڑھ رہے ہیں۔ یہ بات انہوں نے آج یہاں سے جاری ایک بیان میں کہی۔ انہوں نے خبردار کیا کہ اگر جمہوریت کو کوئی نقصان پہنچا تو اس کی تمام تر ذمہ داری موجودہ حکومت پر عائد ہو گی ۔ انہوں نے باور کرایا کہ حالات کو ٹھیک کرنے کے لیے حکومت کے پاس کئی آپشنز ہیں مگر یہ بات سمجھ سے بالاتر ہے کہ حکومت حالات کی سنگینی کا کیوں ادراک نہیں کر رہی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو پی ٹی آئی کے ساتھ مذاکرات کرنے کے لیے ڈور کریشنگ بھی کرنا پڑے تو اسے کرنا چاہیے ۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ حکومت کو دوسری سیاسی جماعتوں سے بھی جلد از جلد رابطے کرنے چاہئیں کیونکہ وہ بھی اس سیاسی نظام میں سٹیک ہولڈرز ہیں اور وہ موجودہ صورتحال پر سخت تشویش رکھتے ہیں کیونکہ حالات بد سے بد تر ہوتے جا رہے ہیں۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ حکومت کو سیاسی کارکنوں یا انکے قائدین کو گرفتار کرنے کے اوچھے ہتھکنڈوں سے باز رہنا چاہیے کیونکہ ایسے اقدمات سے وہ سیاسی طور پر اور بھی الگ تھلگ ہو جائے گی۔ انہوں نے خبردار کیا کہ اگر تیسری دفعہ بھی مسلم لیگ (ن) کی حکومت وقت سے پہلے ختم ہو گئی تو پھر اس پارٹی کا سیاسی مستقبل ہمیشہ کے لیے تاریک ہو جائے گا کیونکہ لوگوں کو اسکی نااہلی کا پختہ یقین ہو جائے گا کہ وہ بڑی اکثریت سے بننے والی یہ حکومت بھی اپنی ہی غلطیوں کا شکار ہو گئی۔ میاں منظور احمد وٹو نے پی ٹی آئی کے مطالبات نہ تسلیم کرنے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس سے ملک کے طول و عرض میں کچھ دال میں کالے کا تاثر عام ہو گیا ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے پی ٹی آئی سے بھی کہا کہ وہ پارلیمانی ریفارمز کمیٹی میں اپنا بھرپور کردار ادا کرے جو کہ انتخابی عمل میں خامیوں کو دور کرنے کے لیے تشکیل دی گئی ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی جمہوریت کا ہر قیمت پر دفاع کرنے کے علاوہ عوام کے حقوق کے لیے سرگرم عمل رہے گی کیونکہ عوامی سیاست پیپلز پارٹی کے منشور کا محور ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں