پنجاب حکومت کا اقدام انتہائی غیر دانشمندانہ اور مجرمانہ فعل ہے: میاں منظور وٹو

218860_l

پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدرنے پنجاب پولیس کی پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں کے خلاف ظالمانہ اور مجرمانہ کارروائی کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے جسمیں انکے کئی کارکن جاں بحق ہونے کے علاوہ بہت سے زخمی بھی ہوئے ۔ میاں منظور احمد وٹو نے ڈاکٹر طاہرالقادری سے قیمتی جانوں کے ضیاع پر دلی تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت کا یہ اقدام انتہائی غیر دانشمندانہ اور مجرمانہ فعل ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے سوگوار خاندانوں سے بھی دلی تعزیت کا اظہار کیا ۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت کی یہ کونسی عقلمندی ہے کہ جسکے تحت سارے لاہور کو کینٹینرز سے بند کر کے روزمرہ کی زندگی کو مکمل طور پر مفلوج کر دیاہے ۔انہوں نے خبردار کیا کہ عوامی تحریک کے کارکنوں اور دوسری سیاسی پارٹیوں کی گرفتاری آگ پر تیل ڈالنے کے مترادف ہو گی۔اس لیے ایسی کارروائیوں سے اجتناب کرنا چاہیے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی نہتے کارکنوں کے خلاف طاقت کے بے جا استعمال کی توثیق کرنے کی متحمل نہیں ہو سکتی کیونکہ پیپلز پارٹی عوامی سیاست کرتی ہے ، عوام کے خلاف سیاست نہیں کرتی۔ انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی مظلوموں کے ساتھ کھڑی ہوتی ہے اور ظالموں کے خلاف جدوجہد کرتی ہے ۔ انہوں نے پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں کی گرفتاری کو مسترد کیا کیونکہ وہ صرف اپنے قائد کی کال پر یوم شہداء منانا چاہتے تھے لیکن پنجاب پولیس کی دہشتگردی سے کئی لوگوں کی ہلاکتیں ہوئیں اور کئی دوسرے شدید زخمی بھی ہوئے جسکی تمام تر ذمہ داری پنجاب حکومت پر عائد ہوتی ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی جمہوریت کے تسلسل پر ایمان کی حد تک یقین رکھتی ہے اور اسکے دوام کے لیے کوئی دقیقہ فرو گزاشت نہیں کرے گی۔انہوں نے یاد دلایا کہ پیپلز پارٹی نے جمہوریت کے لیے بے شمار قربانیاں دی ہیں ۔ پیپلز پارٹی شہداء کی جماعت ہے جس نے ہمیشہ غریبوں کا ساتھ دیا ہے جو ریاستی دہشتگردی کا شکار ہوتے رہے ہیں۔ تاریخ پیپلز پارٹی کے اس کردار کی گواہ ہے۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں