Tanvir Ashraf Kaira condemns Ch. Nisar over the baseless allegations against Atizaz Ahsan

tanveer_ashraf_kaira_lalamusa
Secretary General PPP, Punjab, Tanvir Ashraf has expressed his abhorrence over the baseless allegations of the Interior Minister Chaudhry Nisar Ali Khan against veteran leader of PPP Chaudhry Atizaz Ehsan.
Senator Atizaz Ehsan is a top legal mind of the country who had rendered invaluable services for the cause constitution, independence of judiciary and democracy throughout his life, he added.
He said that one could not understand the motives of the Interior Minister for the indecent politics at a time when PML (N) was struggling for its survival and the PPP was extending qualitative support to save the system that would ensure the continuity of the incumbent government as a consequence.
He said that Opposition Leader Syed Khurish Shah and the Aitzaz Ehsan advised the Prime Minister to call the joint session of Parliament that would get the winds out of the sail of protesting parties who had almost monopolized the TV screens with devastating pressure on the system and especially on the government.
Mr. Tanvir Ashraf Kaira said that the opposition support to the constitution and democracy expressed in the Parliament had provided the much needed stability and confidence to the shaky government to stand on firm feet.
He said that the some elements of the ruling party apparently were determined to rock the boat that clearly suggested that they were driven by their sheer short-sightedness as their activities were hurting the government than helping it.
Tanvir Ashraf Kaira maintained that the need of the hour was that the mandarins should be gearing up pro-actively to mobilize the support from whatever soruce in favour of the government instead of engaged in throwing spanner in the works, my be by deafault
Mr. Tanvir Ashraf Kaira pointed out that the workers of the PPP were agitated over the Party’s present policy towards the ruling Party and wanted the leadership to abandon support to the government to dispel the impression of the Party beingA “B team” of the government. But PPP leadership decided to side with the democratic system and stood up resolutely to the anti-democratic forces, he stated.

پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے سیکرٹری جنرل تنویر اشرف کائرہ نے آج یہاں سے جاری ایک بیان میں چوہدری نثار علی خان، وزیرداخلہ، کے پیپلز پارٹی کے ایک معتبر لیڈر سینیٹر اعتزاز احسن کے خلاف بے بنیاد الزامات کی شدید مذمت کی۔ انہوں نے کہا کہ چوہدری اعتزاز احسن پیپلز پارٹی کا انمول سرمایہ ہونے کے علاوہ ملک کے ایک ممتاز ماہر قانون ہیں جنکی آئین، جمہوریت اور عدلیہ کی آزادی کے لیے ناقابل فراموش خدمات ہیں۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ چوہدری نثار علی خان کے اس موقع پر اپوزیشن پارٹی کے لیڈر پر الزامات کے محرکات کو سمجھنا مشکل نہیں ہے کیونکہ انکے کردار سے حکومت کو استحکام ہونے میں کوئی مدد نہیں مل رہی۔اس کے برعکس پیپلز پارٹی حکومت کے لیے ایک مضبوط سہارے کا باعث بن رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ اور اعتزاز احسن نے وزیر اعظم کو مشورہ دیا تھا کہ وہ پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلائیں تا کہ جمہوری قوتیں بھی اپنی یکجہتی اور طاقت کا مظاہرہ کر سکیں۔انہوں نے کہا کہ اس سے قبل تمام ٹی وی چینلز پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کو تمام کوریج دے رہے تھے جس سے سیاسی نظام اور حکومت کو بڑا نقصان ہو رہا تھا ۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کی وجہ سے حکومت کی سانس میں سانس آئی ہے جو کہ شدید عدم تحفظ کا شکار معلوم ہوتی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ حکومت کے اپنے کچھ لوگ حکومت اور سسٹم کو تباہ کرنا چاہتے ہیں کیونکہ انکا کردار موجودہ بحران میں سیاق و سباق سے ہٹ کر ہے۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ اسوقت جمہوری طاقتوں کے اتحاد کا ہونا اشد ضروری ہے کیونکہ سیاسی نظام دباؤ میں ہے او ر خاص کر حکمران جماعت کے اکابرین کو سیاسی حمایت حاصل کرنے کے لیے سر توڑ کوششیں کرنی چاہئیں نہ کہ ان سیاسی جماعتوں کو ناراض کریں جو کہ حکومت کی سیاسی حمایت کر رہی ہیں۔تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے کارکنوں کی مخالفت کے باوجود پارٹی موجودہ حالات میں حکومت کے ساتھ کھڑی ہے تا کہ جمہوریت اور اسکے دوام کو یقینی بنایا جائے۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں