Mian Manzoor Wattoo compliments Chaudhris for burying the hatchet‏

201210182548_samaa_tv
Mian Manzoor Ahmed Wattoo, President Punjab PPP, in a statement issued from here today has complimented Senator Atizaz Ehsan and Chaudhry Nisar Ali Khan for burying the hatchet and moving forward for the sake of creating an enabling political environment in the country conducive to constitution, rule of law and democracy.
The agitating parties and the government should take a leaf from the recent scuffling between Chaughry Aitzaz Ehsan and Nisar Ali Khan and put cold water on their ego in the interest of constitution, democracy and rule of law, he said.
He observed that there was no end to fighting adding that the sanity demands that it should come to an end sooner to cut the losses to the political system and indeed to the nation that was on the hook. In this case the constitution and democracy are at stake and their preservation is the worthwhile cause as compare to digging the heels , he argued.
In politics and especially in democracy juggernauting is quintessentially self-defeating because of its exclusiveness and its undertakers would be definite victim at the end of the day because its prognosis could not be otherwise.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that the present crisis was also the test of the agitating parties and the governments to prove their democratic credentials adding the people of the country were watching them to formulate their experienced- based opinion about them.
The overwhelming silent majority will express their opprobrium in the shape of inflicting embarrassing electoral debacle on them if they fail to prove their worth as the true believers in democratic dispensation, he opined. The societal electoral setback will be the inevitable fate of those who care less for the aspirations of the people reflected in the constitution, he argued.
He pointed out that the nation had been passing through an ordeal for the last many days and the apathy of the agitating parties and the mandarins was most unfortunate and indeed unforgiving.
The nation is on its knees because the image of the country has taken nosedive after this tamasha . The colossal damages to the economy and above all the postponement of the visit of the Chinese President to Pakistan have put the country in a tight corner of isolation, he commented. How much damages they are contemplating to inflict this nation, he asked.

پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے آج یہاں سے جاری ایک بیان میں چوہدری نثار علی خان اور اعتزاز احسن کو اختلافات کو درگزر کرنے پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے یہ فیصلہ ملک میں ایک سازگار سیاسی فضاء بنانے کے لیے کیا جو کہ ہر لحاظ سے قابل ستائش ہے۔انہوں نے کہا کہ چوہدری اعتزاز احسن اور نثار علی خان کے فیصلے سے احتجاج کرنیوالی جماعتوں اور حکومت کو اس سے سبق سیکھتے ہوئے موجودہ بحران کو جلد از جلد ختم کریں تا کہ قوم سکھ کا سانس لے جو کہ پچھلے چند ہفتوں سے غیر یقینی کے عذاب میں مبتلا ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ موجودہ سیاسی بحران نے آئین اور جمہوریت کے لیے خطرات پیدا کر دئیے ہیں اور احتجاج کرنیوالی جماعتوں اور حکومت پر لازم ہے کہ سیاسی کشمکش کو ختم کریں کیونکہ جمہوریت اور آئین کی بالادستی کا سوال ہے۔ انہوں نے کہا کہ سیاست میں اور خاص کر جمہوری سیاست میں دھونس اپنے پاؤں پر کلہاڑی مارنے کے مترادف ثابت ہوتی ہے کیونکہ اسکے نتائج کبھی بھی سود مند نہیں ہوتے اور دھونس کرنے والے ہمیشہ نقصان اٹھاتے ہیں۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ موجودہ بحران احتجاج کرنیوالی جماعتوں اور حکومت کی جمہوریت پسندی کا امتحان ہے اور ملک کی بڑی خاموش اکثریت انکی سرگرمیوں کو بغور دیکھ رہی ہے اور وہ تجربات کی بنیاد پر اپنی رائے قائم کرے گی جسکا اظہار وہ آئندہ انتخابات میں ہو گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر حکومت ، پی ٹی آئی اور پی اے ٹی اس بحران کو حل کرنے میں ناکام رہیں تو خاموش اکثریت آئندہ انتخابات میں ان سے منہ موڑ لے گی۔انہوں نے کہا کہ انکی لڑائی کی وجہ سے آج قوم گھٹنوں کے بل پڑی ہے، دنیا میں اس تماشے کی وجہ سے پاکستان کا امیج بری طرح متاثر ہوا ہے اور پاکستان اکیلا تنہائی کے گوشے میں گھرا ہوا معلوم ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ چین کے صدر کے دورے کے منسوخ ہونے سے ملک کو بڑا معاشی اور سفارتی نقصان ہوا ہے۔انہوں نے سوال کیا کہ حکومت اور احتجاج کرنیوالی پارٹیاں ملک کو اور کتنا نقصان پہنچانا چاہتی ہیں؟

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں