چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کی آئی ڈی پیز پاکستان کے لئے اپیل

BilawalBhutto_9-7-2014_159055_l

میں آج آپ سے ایک بہت سنجیدہ مسئلہ پر بات کرنا چاہتا ہوں۔ میں آج آپ کی توجہ ہمارے ملک کے ان متاثرین کی طرف دالونا چاہتا ہوں جو ہمارے خاطر در بدر ہوئے ہیں۔ آج میرے پاکستان میں ہر طرف خون کی پیاس ہے۔ نفرت کے بادل ہیں اور میں حیران ہوں کہ میرے ملک کے لوگ اپنی دھرتی کو کیسے بھول گئے ہیں۔ آج میری پاک سرزمین کے سینے پر لاکھوں آئی ڈی پیز ، Internally displaced persons، ہمارے دربدر بہنوں اور بھائیوں کا بوجھ ہے۔ آج ہم نہیں بھول سکتے کہ ابھی تو دہشت گردوں سے لڑتے ہوئے شہید ہونے والے میری پاک فوج کے جوانوں کا لہو بھی خشک نہیں ہوا، آج ہم نہیں بھول سکتے آپریشن ضرب عصب پاکستان کی بقاء کی جنگ ہے، یہ ہماری سلامتی کی جنگ ہے۔ یہ ملک ، جمہوریت ہمیں بہت قربانیوں کے بعد ملی ہے، ہم نے شہید محترمہ بے نظیر بھٹو ، ہماری فوج ، ہماری پولیس اور لاکھوں عوام کی شہادت اس لیے نہیں دی تھی کہ ہماری قوم ہمارے ملک کے ہی اپنوں کو بھلا دیں۔ ہمیں اپنے متاثرین کو ان کی ضرورت کے وقت نہ صرف یاد رکھا ہے بلکہ ان کی ہر ممکن مدد کرنی ہے۔ یہ لوگ ہماری خاطر، اس ملک میں دربدر ہوئے ہیں۔ یہ لوگ اس جنگ کی وجہ سے دربدر ہوئے ہیں جو پورے پاکستان کی جنگ ہے۔ 2009میں بھی ہمارے ہم وطن دربدر ہوئے تھے۔ 2009میں بھی ہمیں یہ جنگ لڑنا پڑی تھی۔ ہماری قوم یہ دن پہلے بھی دیکھ چکی ہے، مگر اس وقت ہم ایک قوم کی طرح مل کر اکٹھا کھڑے ہو گئے تھے۔ 2009میں ہماری قوم نے اپنے دربدر بہن اور بھائیوں کے لیے اپنے گھروں کے دروازے کھل دیے تھے۔ ہم نے سوات اور گردونواح کو دہشتگردوں سے پاک کر دیا تھا، ہم نے اس وقت کی جنگ کو پوری سیاسی اونرشب دی۔ ہمارے قومی اداروں نے کیمپوں میں اسمارٹ کارڈز کے ذریعے ایک ایسا نظام بنایاجس سے ان متاثرین کی مدد ہوئی اور وہ باعزت اپنے گھروں کو لوٹ گئے۔ ہم اپنے جوانوں کے شانہ بشانہ کھٹرے رہے اور ایک قوم ہونے کا ثبوت پیش کیا۔ مگر افسوس، آج ہمارے جوان اپنی جانوں کے نذرانے پیش کر رہے ہیں۔ مگر ان کے ساتھ کھڑا ہونے کے بجائے ہماری قومی یکجہتی سیاست کی نظر ہوگئی ہے۔ میں ایک بار پھر دردمندی سے ، بڑی عاجزی سے ، اپنی قوم سے ، ہمارے حکمرانوں سے، اپنے سیاستدانوں سے کہتا ہوں کہ اب جانے دو، خدا کے لئے جانے دو اور اپیل کرتا ہوں کہ آؤ! ان کے لئے جنگ کریں، جن کے پاس زندگی کی بنیادی سہولتیں نہیں ، جو ہماری قومی جنگ کی خاطر بے گھر ہوئے ہیں۔یہ ہمارے بہن اور بھائی دہشت گردوں کے ظلم و ستم کا نشانہ بنتے رہے ہیں۔ ہماری بیٹیوں کے اسکول بم سے اڑا دیئے گئے۔ ان پر ڈرون کی بارش کی گئی، خودکش حملوں کی بوچھاڑ کی گئی، ان کے گھر چھین لیے گئے۔ ہزاروں جنازے ان کے گھروں سے اٹھے مگر ان کے حوصلے پھر بھی پست نہیں ہوئے۔ ان کی یہ قربانیاں ضائع مت ہونے دیں۔ آؤ ان کی مدد کے لئے آگے بڑھو۔ان سپاہیوں کے زخموں پر مرحم رکھیں جو ہماری خاطر لڑ رہے ہیں۔ آؤ! اپنے جوانوں کو بتادیں کہ پوری قوم ان کے ساتھ ہے۔ آؤ! ان بہنوں کے ساتھ کھڑے ہوجائیں جن کے بھائی شہید ہوئے ہیں۔ آؤ! ان خاندانوں کا سہارا بنیں جن کے گھر کے چراغ ہماری جنگ میں بجھا دیے گئے ہیں۔ آؤ ! ایک بار پھر سے ایک قوم بن کر، ایک ملک بن کر، اپنے ملک کے دربدر بہنو ں اور بھائیوں کو بتا دیں کہ ہم ان کا ساتھ کبھی نہیں چھوڑینگے۔آؤ! 2009 والا جذبہ پھر سے اجاگر کریں۔ آؤ انہیں بتا دیں کہ سندھ بھی ان کے ساتھ ہے، بلوچستان بھی ان کے ساتھ ہے، آزاد کشمیر گلگت بلستان بھی ان کے ساتھ ہے۔ خاص طور پر خیبر پختواہ اور پنجاب بھی دکھا دے کہ وہ بھی ان کے ساتھ ہیں۔ پورا پاکستان اس مشکل گھڑی میں ان کے ساتھ کھڑا ہے۔ یہ ہماری ڈیوٹی ہے۔ یہ ہم پر لازم ہے اور میں آپ سب سے اپیل کرتا ہوں کہ ایک قوم بن کر اپنے دربدر بہنوں اور بھائیوں کا ساتھ دیں۔ میر ی اپیل ہے کہ آپ اپنے ملک کی خاطر اور انسانیت کے ناطے جس طرح بھی ہوسکے اپنے ساتھی ہم وطنوں کی بھرپور مدد کریں۔ آپ اپنی مرضی کی این جی اوز اور مختلف فلاحی اداروں کے ذریعے اس کام میں قدم بڑھائیں۔ ان کے ساتھ کھڑے ہوکر ان کی زندگی بدل دیں۔ میں پی پی پی کے کارکنوں کو ہدایت کرتا ہوں کہ پی پی پی آئی ڈی پیز کمیٹی کا ہاٹھ بڑھائیں اور دل کھول کر عطیات دیں۔ آئیں! ان نفرتوں کو ختم کر یں کیونکہ یاد رکھنانفرت ہمیں تباہ کر دی گی۔

پاکستان زندہ باد!

http://dai.ly/x25eg5i
Bilawal Bhutto Zardari appeals for ‘IDP… by PPPOfficial

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں