Mian Manzoor Ahmed Wattoo pays tributes to late Shahbaz Bhatti

201210182548_samaa_tv
Meritorious services for the promotion of inter-faith harmony of late Shahbaz Bhatti, former Federal Minister for Minorities Affairs, will be long remembered said Mian Manzoor Ahmed Wattoo, President Punjab PPP, in a message on the occasion of the 46th birthday anniversary of the deceased.
He further said that Shahbaz Bhatti assiduous struggle continued for the cause till he was shot dead in Islamabad three years ago by religious fanatic elements to silence his voice. But, his mission of tolerance, brotherhood and peaceful co-existence continued unabatedly, he added.
He referred to his strenuous efforts against the misuse of the discriminatory laws against the minorities mostly driven by the criminal intentions of culprits to deprive them from their property or settle scores of personal infighting.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that the PPP considered minorities as its constituency and had taken a number of laudable steps during the period of its last PPP democratic government to bring them in mainstream politics of the country as important stakeholders.
He reminded that Shahbaz Bhatti as a Minister worked day and night for the empowerment of the minorities of the country and the PPP government’s response was equally positive and forthcoming.
He recalled that the PPP government reserved five per cent quota for the minorities in the government jobs and ensured its implementation in letter and spirit.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo added that the PPP also approved four seats for the minorities in the Senate, first time in the history of the Upper House.
The democratic government of the PPP also declared August 11 every year as the Minorities Day. The Day has the significance because the Founder of the Nation ensured the minorities of Pakistan on the Day in 1946 that they would be equal citizens of Pakistan.
It was also decided that the two religious festivals of each religious community would be observed officially. In Jails places for worship for the minorities were also reserved.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that the PPP government decided to bring legislation to grant representation to the minorities’ on the basis of their population in the country. A lot of work in this regard was undertaken but with the change of government the legislative process could not be completed.

مرحوم شہباز بھٹی، سابق وزیر برائے اقلیتی امور، کی بین المذاہب ہم آہنگی کے فروغ کے لیے شاندار خدمات یاد رکھی جائیں گی۔ یہ بات پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے آج یہاں اپنے ایک پیغام میں کہی ،جوانہوں نے مرحوم کے 46ویں یوم پیدائش پر دیا۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم نے آخری دم تک اپنے مشن کو جاری رکھا جب انکو 3سال پہلے مذہبی جنونی مجرموں نے اسلام آباد میں انکو گولیوں کا نشانہ بنایا اور وہ خالق حقیقی سے جا ملے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ انکا بھائی چارے، رواداری اور پرامن بقائے باہمی کا مشن جاری رہا اس میں کوئی کمی نہیں آئی۔ میاں منظور احمد وٹو نے شہباز بھٹی کی اس جدوجہد کااپنے پیغام میں خاص کر ذکر کیا جو انہوں نے بعض قوانین کا غلط استعمال اقلیتوں کے خلاف کیا جاتا رہا تھا ان قوانین کا استعمال مجرمانہ ذہنیت کے لوگ انکی جائیدادوں پر قبضہ کرنے کے لیے کیا کرتے تھے۔میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی اقلیتوں کو اپنا حلقہ سمجھتی ہے اور اس نے پچھلے اپنے دور حکومت میں ان کی فلاح اور انکو ملک کی سیاست کے دھارے میں شامل کرنے کے لیے کئی تاریخی اقدامات کئے۔ انہوں نے یاددلایا کہ شہباز بھٹی نے اقلیتوں کو با اختیار بنانے کے لیے شب و روز کوششیں کیں اور خوش قسمتی سے پیپلز پارٹی کی حکومت بھی انکے مطالبات تسلیم کرنے میں پیش پیش رہی۔ میاں منظوراحمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی پچھلی حکومت نے اقلیتوں کے لیے سرکاری نوکریوں میں 5فیصد کوٹہ نہ صرف مختص کیا بلکہ اسکو عملی جامہ بھی پہنایا۔انہوں نے مزید کہا کہ اس وقت کی حکومت نے اقلیتوں کے لیے سینیٹ میں 4نشستیں مخصوص کیں جو سینیٹ کی تاریخ میں پہلی دفعہ ایسا ہوا۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی حکومت نے ہر سال 11اگست کو اقلیتوں کے دن کے طور پر منانے کا بھی اعلان کیا ۔ اس دن کی خاص اہمیت ہے کیونکہ 11اگست کو قائد اعظم نے اپنی تقریر میں اقلیتوں کو پاکستان میں برابر کے شہری کا درجہ دینے کا وعدہ کیا تھا۔ پیپلز پارٹی کی حکومت نے ہر اقلیتی کمیونٹی کے دو مذہبی تہواروں کو سرکاری طور پر منانے کا بھی اعلان کیاتھا ۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی حکومت اقلیتوں کو آبادی کی بنیاد پر پارلیمنٹ میں نمائندگی دینے کے ضمن میں قانون سازی کرنا چاہتی تھی لیکن حکومت کی تبدیلی کی وجہ سے قانون سازی نہ ہوسکی لیکن پارٹی اس حوالے سے اپنا سیاسی اثرو رسوخ ضرور استعمال کرے گی۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں