پاکستان پیپلز پارٹی جنوبی پنجاب کا اہم اجلاس

10489656_526538397449524_7070184870735977183_n

پاکستان پیپلز پارٹی جنوبی پنجاب کی ایگزیکٹو باڈی کا اہم اجلاس زیر صدارت جناب مخدوم شہاب الدین صدر پی پی پی جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ ڈوگر ہائوس ملتان میں منعقد ہوا ۔ جس میں ملک محمد عامر ڈوگر ، محمود حیات ٹوچی، خواجہ رضوان عالم ، حیدر زمان قریشی ، رائو ساجد علی خان ، خورشید احمد خان ، ایم سلیم راجہ، نوازش پیر زادہ ، چوہدری محمد یٰسین ، صائمہ عامر ایڈوکیٹ ، شہناز لودھی ، شگفتہ حبیب ، سلیم الرحمان میو، محمد رضوان ہانس، بیگم بی اے جگر، عارف شاہ ، سحرش خان اور ریاض حسین بخاری نے شرکت کی ۔ ملک محمد عامر ڈوگر نے اپنے استقبالیہ خطاب میں سیلاب کی تباہ کاریوں پر روشنی ڈالی اور ضلعی شہری اور صوبائی تنظیموں سے اپنے سیلاب زدہ بھائیوں کی مدد کرنے کی اپیل کی۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی پنجاب پی پی پی کا گڑھ ہے۔ ہمیں عملی اقدامات کی ضرورت ہے ۔ موجودہ حالات میں بھی پی پی پی ملکی مسائل پر حقیقی اپوزیشن کا کردار ادا کر رہی ہے۔ جناب بلاول بھٹو زرداری عنقریب پنجاب کا دورہ کریں گے۔ مخدوم شاہ ڈوگر نے ضمنی الیکشن NA-149ملتان نے بھرپور حصہ لینے کا اعلان کیا۔
خالد حنیف لودھی صاحب نے کہا کہ پارٹی پولیسی میں ابہام پایا جا رہا ہے کہ پارٹی ضمنی الیکشن میں حصہ نہیں لے گی ،اسے دور کیا جائے۔ میٹنگ کے شرکاء کا خیال اور سوچ بھی یہی تھی کہ اب مزید مفاہمت کی گنجائش نہیں رہی ۔
رائو ساجد علی خان نے جذباتی تقریر کی ۔ انہوں نے کہا کہ کیا میثاقِ جمہوریت صرف پی پی پی کے لئے ہے ۔ ہمارے دو وزیراعظم عدالتوں کے چکر لگا رہے ہیں اور حکومت مسلسل ہماری قیادت کو انتقامی کاروائیوں کا نشانہ بنا رہی ہے ۔ پی پی پی کی پورے پاکستان میں ایک پالیسی ہونی چاہئے۔
عارف شاہ نے PSFاور PYOکے حوالے سے مسائل بیان کئے اور قیادت کی توجہ اس طرف مبذول کروانے کی درخواست دی۔ انہوں نے کہا کہ ہم جمہوریت کو بچا رہے ہیںلیکن دو بھائیوں کی حکومت کو نہیں ۔ انہوں نے شہید بھٹو اور شہید بی بی کی قربانیوں کو خراجِ تحسین پیش کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ملک محمد عامر ڈوگر کے الیکشن لڑنے کی صورت میں ہمیں اللہ پر پورا یقین ہے کہ وہ ہمیں کامیابی عطاکرے گا۔
سلیم الرحمان میو نے کہا کہ جتنی مفاہمت کی سیاست ہونا تھی ہو چکی ۔ اب ہم اپوزیشن کا کردار ادا کریں گے۔ بلاول بھٹو کو اپنے ورکر سے ملنا چاہئے جس سے ان میں نیا جذبہ پیدا ہوگا۔
غلام سرور دلشاد نے کہا کہ میثاقِ جمہوریت بی بی شہید نے کیا اور زرداری صاحب نے اس پر پورا عمل کیا لیکن اب یہ مفاہمت ختم ہونی چاہئے اور ہمیں ایک اصل اپوزیشن پارٹی کا رول ادا کرنا چاہئے۔
سحرش خان نے ملک محمد عامر ڈوگر کی الیکشن لڑنے کی بھرپور حمایت کی اور کہا کہ ہم ان کی جیت کے لئے دن رات ایک کر دیں گے۔ پارٹی اپنی شناخت برقرار رکھے گی۔
خورشید خان صاحب نے کارکنوں کے جذبات کی قدر کرنے پر زور دیا انہوں نے کہا کہ ان احساسات کا اس وقت تک تدارک نہیں ہوگا جب تک مرکزی قیادت کارکنوں کواپنا ہونے کا احساس نہیں دلاتی۔ سیلاب سے متاثرہ عوام کی بھرپور خدمت کی جائے گی۔ ملک محمد ڈوگرکو NA-149ملتان میں امیدوار نامزد کیا جائے تاکہ یہ ابہام مکمل ختم ہواور پارٹی کارکنان ان کی الیکشن مہم میں حصہ لیں اور انشاء اللہ کارکنوں کی محنت سے فتح ہماری ہوگی۔ ہمیں ایسی جمہوریت نہیں چاہئے جس میں پارٹی کا فلسفہ ہی ختم ہو جائے۔ ہمیں اپنے کردار پر غور کرنا پڑے گا۔ قیادت اور کارکنوں کے درمیان فاصلہ ختم ہونا چاہئے۔
بیگم بی اے جگر نے کہا کہ میں پارٹی ورکر تھی اور رہوں گی۔ میں پارٹی کو جواب دہ ہوں اور جواب لوں گی بھی۔ ہماری نظریں بی بی شہید کو ڈھونڈ رہی ہیں۔
شہناز لودھی صاحبہ نے سب حاضرین کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ہمارا انسانی فریضہ ہے کہ سیلاب زدگان کی مددکریں۔ امید ہے کہ ملک محمد عامر ڈوگر کو پارٹی ٹکٹ دیا جائے گااور حقیقی ورکر اسمبلی میں پہنچانے میں اللہ ہماری مدد کرے گا۔ ملک عامر ڈوگر پارٹی کا سرمایہ ہے ہم ان کے لئے دن رات ایک کر دیں گے۔ ان کی خدمات کا اعتراف پورا حلقہ اور ملتان کرتا ہے ۔ انشاء اللہ انہیں کامیابی حاصل ہوگی اور یہ ہم سب کی جیت ہوگی۔
صائمہ عامر ایڈوکیٹ نے آج کی میٹنگ بہت اچھے طریقے سے منعقد کرنے پر خراجِ تحسین پیش کیا ۔انہوں نے کہا کہ زرداری صاحب بلاول بھٹو صاحب کا ہم انتظار کر رہے ہیں اور ملک عامر ڈوگر کی کامیابی کے لئے ہر ممکن کوشش کریں گے۔
رضوان ہانس نے یوتھ کی خاص پالیسی دینے کا ذکر کیا تاکہ ہم مخالفوں کی تنقید کا سامنا کر سکیں۔ NA-149ملتان میں ملک عامر ڈوگر کی کامیابی کی دعا کی۔
نوازش پیر زادہ نے سب حاضرین کا شکریہ ادا کیا انہوں نے کہا کہ سیلاب کے لئے سندھ میں 10کروڑ کا عطیہ دیا ہے جس میں جنوبی پنجاب کا حصہ جلد مل جائے گا۔ ہم پی پی پی کی قیادت پر تنقید کرتے ہیں لیکن یہ تنقید تعمیری ہونی چاہئے۔ بی بی شہید کی شہادت کے بعد ہمیں کامیابی بھی حاصل ہوئی۔اپر پنجاب کے تقریباً سب ارکان کو وزارتیں دی گئیں دوسری طرف ہمیں وزیر اعظم گورنر اور وزیر خارجہ دیا گیا ہمیں دیکھنا چاہئے ۔ اس کے باوجود گذشتہ الیکشن کا یہ رزلٹ کیوں آیا؟ پارٹی نے پارٹی کو مضبوط نہیں کیا بلکہ اشخاص کو مضبوط کیا جو کہ درست فیصلہ تھا یا غلط لیکن ایسا نہیں ہوا۔ ہمیں خود احتسابی کے عمل سے گزرنا ہوگا۔ اگر ہم اپنی طاقت مخالفوں میں ڈھونڈیں گے اپنوں میں نہیں تو پھر ہمارا حشر یہی ہوگا۔ ہمیں پارٹی کے نظریاتی کارکنوںکو آگے لانا ہوگا۔
محمود حیات خان ٹوچی نے کہا کہ کارکن پارٹی کا سرمایہ ہیں آپ سے التماس ہے کہ ہمارے جذبات لیڈرشپ کو پہنچائیں اور جنوبی پنجاب کا کنوینشن کروائیں ۔ حالات آہستہ آہستہ بہتر ہوتے جا رہے ہیں۔ کارکنوں کی مایوسی اپنی جگہ اور وہ دور کرنا پڑے گی۔ حلقہ NA-149ملتان میں ہاشمی صاحب کی جگہ بہت کم ہو چکی ہے ۔ملک عامر ڈوگر کو امیدوار نامزد کیا جائے ۔ پارٹی قیادت خصوصاً بلاول بھٹو ملتان آئیں جو کہ پارٹی ورکر کے لئے اچھا پیغام ہوگا۔ ہم انشاء اللہ اپنا ووٹ بینک دوبارہ اصلی صورت میں واپس لائیں گے۔ آپ اعلان کر کے جائیں کہ ملک عامر ڈوگر کو ٹکٹ دیا جائے گا اور یہ مطالبہ ایک قرارداد کی صورت میں پیش کیا جو روف لودھی نے پیش کی جو متفقہ طورپر منظور کر لی۔
حیدرزمان قریشی نے مختصر نوٹس پر شرکت کرنے پر تمام خواتین و حضرات کا شکریہ ادا کیا جس کا ایجنڈا واضح تھا کہ سیلاب متاثرین کی ہر ممکن مدد کی جائے۔ احتساب کارکنوں سے لے کر قیادت تک سب کا ہونا چاہئے ۔ شہری تنظیمیں شہر میں اور حلقوں کی تنظیمیں اپنے حلقوں میں کیمپ لگائیں۔ جنوبی پنجاب کا حصہ ضلعی اور شہری تنظیموں کے ذریعے دیا جائے گا۔ یہ سازش بہت جلد ظاہر ہوجائے گی کہ یہ سیلاب کچھ لوگوں کی خواہش پر چھوڑا گیا ہے۔ ہم حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بنائیں گے ۔ خورشید شاہ صاحب صرف پی پی پی کے نہیں اپوزیشن کے لیڈر ہیں۔ پی پی اس وقت بولتی ہے جب اعتزاز بولتا ہے ۔ شرجیل بولتا ہے۔ شوکت بسرا بولتا ہے۔ رضا رحمانی بولتا ہے۔ حلقہ NA-149ملتان میں ایک ورکر جیت گیا تو یہ عثمان بھٹی کی طرح ایک ورکر کی جیت ہوگی۔ ہمیں آئین میں رہتے ہوئے اپوزیشن کرنی ہے۔ PTIمیں ہر شخص کے خیالات مختلف ہیںاور ان میں کوئی ہم آہنگی نہیں۔ NA-149ملتان کا الیکشن ملک عامر ڈوگر PTIسے چھین لے گا انشاء اللہ۔ ہم دل و جان سے یہ الیکشن لڑ کر PTIکے صدر کو ہرائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ مہنگائی عنقریب 30فیصد بڑھنے والی ہے۔ آپریشن ضرب ِ عضب پی پی پی کے مطالبے پر شروع کیا گیا ۔
ریاض حسین بخاری نے شہاب الدین صاحب سے درخواست کی کہ اپنے طور پر ہمیں یقین دلائیں کہ حلقہ NA-149ملتان کا ٹکٹ ملک عامر ڈوگر کو ہی دیا جائے گا۔ آخر میں مخدوم شہاب الدین نے سب کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ میں نے آتے ہیں کہا کہ ہم نے NA-149ملتان کا الیکشن ہر صورت لڑیں گے۔ انہوں نے حیدر زمان صاحب کا خصوصی شکریہ اد ا کیا اور کہا کہ زرداری صاحب عنقریب پنجاب تشریف لا رہے ہیں۔ الیکشن میں 50فیصد حصہ خواتین کا ہوتا ہے یہ الیکشن ہماری خواتین نے پوری دلجمعی کے ساتھ لڑنا ہے۔ میں خوشی کے بادل دیکھ رہا ہوں ۔ انشاء اللہ کامیابی ہماری ہوگی۔ اور یہ جیت پی پی پی کے لئے خشت اول ثابت ہوگی۔ میں نے قیادت سے کہا ہے کہ جب تک ہم PMLNپر تنقید نہیں کریں گے خلاء بڑھتا جائے گا۔ یہ پہلی حکومت ہے جو کسی کی مدد کے بغیر خود گرنے والی ہے۔ پی پی پی کبھی اسٹیبلشمنٹ کے سہارے اقدار میں نہیں آئی سب سے پہلے ہم نے ہی کہا تھا کہ یہ ROکا الیکشن ہے۔ ROsنے رزلٹ کچی چٹوں پر دیا اور الیکشن کمیشن میں صحیح فارم پر رزلٹ جمع کروایا گیا۔
آخر میں انہوں نے یقین دلایا کہ ملک محمد عامر ڈوگر حلقہ NA-149ملتان میں پی پی پی کے امیدوار ہوں گے۔ انشاء اللہ
شکریہ
ریاض حسین بخاری
ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات
ملتان شہر

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں