ہم جمہوریت بحال کرکے رہیں گے، ہم نے پاکستان بچانا ہے اور ہم ضرور جیتیں گے: آصف زرداری کا اے پی سی سے خطاب #APC2020 #UnitedForDemocracy

پیپلز پارٹی کی میزبانی میں آل پارٹیز کانفرنس کا آغاز ہوگیا ہے جس میں سابق صدر آصف زرداری اور سابق وزیر اعظم نواز شریف ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہیں۔
اے پی سی میں سابق صدر آصف زرداری نے ابتدائی نوٹ سے خطاب کرتے ہوئے سارے شرکاء کو خوش آمدید کہا اور سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صحت کے لیے دعا کرنے کے ساتھ کہا کہ میرے خیال میں یہ اے پی سی بہت پہلے ہونی چاہیے تھی۔

ان کا کہنا تھا جب سے ہم سیاست میں ہیں میڈیا پر اس طرح کی پابندیاں نہیں دیکھیں، چاہے کتنی ہی پابندیاں لگائی جائیں، لوگ ہمیں سن رہے ہیں، حکومت اے پی سی کے خلاف ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہے یہی ہماری کامیابی ہے۔

سابق صدر نے کہا کہ بے نظیر بھٹو نے نواز شریف کے ساتھ مل کر میثاق جمہوریت پر دستخط کیے اور پھر ہم آہنگی کے ذریعے مشرف کو بھیجا، 18 ویں ترمیم کے گرد ایک دیوار ہے جس سے کوئی بھی آئین کو میلی آنکھ سے نہیں دیکھ سکتا۔

آصف زرداری نے کہا کہ ہم صرف اس حکومت کو نکالنے نہیں آئے بلکہ اس حکومت کو نکال کر اور جمہوریت بحال کر کے رہیں گے، ہم نے پاکستان بچانا ہے اور ہم ضرور جیتیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ’انشا اللہ ان (نواز شریف) کی صحت بہتر ہو جائے گی اور وہ ہم سب میں ہوں گے۔‘آصف زرداری کا کہنا تھا کہ ’یہ اے پی سی بہت پہلے ہو جانی چاہیے تھی۔ اس اے پی سی کے خلاف جو ہتھکنڈے حکومت استعمال کر رہی ہے وہی اس کی کامیابی ہے۔‘

حکومت کی جانب سے نواز شریف اور آصف زرداری کی تقاریر نشر نہ کرنے کے اعلانات پر ردعمل دیتے ہوئے آصف زرداری کا کہنا تھا کہ ’جنرل مشرف کو دیکھایا جا سکتا ہیں، مگر میرے انٹرویو پر پابندی لگائی جا سکتی ہے۔‘ ان کا کہنا تھا کہ ’ہمیں پیمرا کی ضرورت نہیں ہے۔ لوگ ہمیں سن رہے ہیں اور سنتے رہیں ہیں۔‘

حکومت پر تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ’جب سے سیاست میں ہیں کبھی ایسے نہیں دیکھا۔ یہ سب ان کی کمزوریوں کی نشانی ہے۔ آج کل میڈیا پر پابندی ناممکن ہے۔ کسی کو کوئی روک نہیں سکتا۔‘

مسلم لیگ ن کے رہنما مریم نواز کو اے پی سی میں خوش آمدید کرتے ہوئے آصف زرداری کا کہنا تھا کہ ’مجھے خوشی ہے کہ مریم بی بی بھی یہاں ہیں۔ وہ میاں صاحب کی اور قوم کی بیٹی ہیں۔ میری اپنی بہن، بیوی جیل جا چکی ہیں۔ انھوں نے بھی تکلیف سے وقت گزارا میں انھیں سلام کرتا ہوں۔ ہم آپ کے ساتھ ہیں اور ہم آپ کے لیے لڑتے رہیں گے۔‘

آصف زرداری نے آج کی بیٹھک پر اپنے تقریر پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ’اس تقریب کے بعد پہلا بندہ میں ہی جیل میں ہوں گا۔ مولانا صاحب آپ ضرور ملنے آئیے گا۔۔۔یہ لوگ اوپر سے آ کر ہم پر قابض ہو گئے ہیں۔۔۔ ہم انھیں حکومت سے نکال کر جمہوریت بحال کر کے رہیں گے۔ ہم نے ان سے پاکستان کو بچانا ہے۔‘

اپنا تبصرہ بھیجیں