ECP Report confirms reservations of PPP regarding 2013 Elections: Mian Manzoor Wattoo

201210182548_samaa_tv
Mian Manzoor Ahmed Wattoo, President Punjab PPP, has said that the reservations raised by the PPP leadership regarding the dubious role of the Returning Officers on 2013 elections has been confirmed by the Election Commission Report published/broadcast by the media today.
He said that the in the Report the Elections Commission had listed multiple factors those were responsible for the “electoral mess created by the Returning Officers”. He further said that the system for the tabulations of election results was out of order, ballots papers were not received on time, staff was not trained for the use of magnetic ink and above all the Returning Officers changed the staff at the nick time.
He observed that the ECP Report had damaged the credibility of the whole electoral process of 2013 elections adding that the PML (N) would lose its legal and moral authority of having mandate of the people representing the voice of the people.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo observed that the legitimacy of the government was in jeopardy as a consequence that could only be addressed by seeking the fresh mandate from the electorates.
He said that the Chairman Bilawal Bhutto would also unfold the extent of rigging of 2013 elections from Karachi to Khyber on October 18, 2014, when he would address the Party meeting at Karsaz, Karachi, the day when terrorists tried to assassinate Shaheed Benazir Bhutto when she was leading the mammoth procession there after arrival in Karachi from Dubai.
He recalled that after few days of 2013 elections, Co- Chairman Asif Ali Zardari in his meeting in Karachi with TV Anchorpersons said, ‘ROs are responsible for the electoral debacle inflicted on the PPP adding how it is possible that the support of the Party evaporated with the start of the boarders of South Punjab up to Attock and returned with the commencement of KPK frontiers.’
He said that the PPP leadership decided to accept the results only for the sake of the continuity of democracy in the country because the Party leaders and its workers had rendered ultimate sacrifices for the cause of constitution and democracy.
But, now after the Election Commission’s Report made public, the Party would reconsider its position as the stand of the Party on May elections would become exceedingly difficult to defend in the future.

الیکشن کمیشن آف پاکستان کی 2013 کے انتخابات کے متعلق جو رپورٹ آج اخباروں میں شائع ہو ئی ہے اس نے پیپلز پارٹی کے ریٹرننگ افسروں کے متنا زعہ کردار کے متعلق پارٹی کے موقف کی تصدیق کر دی ہے یہ بات پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے آج یہاں سے جاری ایک بیان میں کہی۔ انہوں نے مزید کہا کہ الیکشن کمیشن نے مئی 2013 کے انتخابات میں خرابیوں کا زیادہ تر ذمہ دار ریٹرننگ افسروں کو ٹھہرایا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ الیکشن کمیشن کی رپورٹ کے مطابق انتخابی نتائج اکٹھے کرنے کا نظام کام نہیں کر رہا تھا، وقت پر بیلٹ پیپرز پولنگ سٹیشنز پر نہیں پہنچے، مقناطیسی سیاہی کے استعمال کی مربوط ٹریننگ نہیں دی گئی اور ریٹرننگ افسروں نے عین وقت پر پولنگ سٹاف کی تبدیلیاں کیں، جو انتخابی خرابیوں کا باعث بنے۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن کی رپورٹ سے 2013کے سارے انتخابی عمل کی ساکھ متاثر ہوگی جسکے نتیجے میں حکومت کی قانونی اور اخلاقی اتھارٹی بھی بری طرح متاثر ہوگی ۔میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ اس رپورٹ سے معلوم ہوتا ہے کہ حکومت کی اتھارٹی کا جواز بھی متنازعہ ہو جائیگا جسکو صرف نئے مینڈیٹ سے ہی حل کیا جا سکتا ہے۔میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو 18 اکتوبر کو کارساز، کراچی، کے جلسے میں 2013 کے انتخابات کی انتخابی دھاندلی کے متعلق تفصیلات بتائیں گے جو کراچی سے لے کر خیبر تک ہوئی ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے یاددلایا کہ 2013 کے انتخابات کے کچھ دنوں بعد ہی کو چیئرمین آصف علی زرداری نے کراچی میں ٹی وی اینکر پرسن سے باتیں کرتے ہوئے کہا تھا کہ ریٹرننگ افسروں نے اپنا کمال دکھایا ہے کیونکہ یہ کیسے ہو سکتا ہے کہ پیپلز پارٹی کے ووٹ جنوبی پنجاب کی بارڈر شروع ہوتے ہی ختم ہو گئے اور یہ سلسلہ اٹک تک جاری رہا۔میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی قیادت نے 2013 کے انتخابی نتائج کو صرف جمہوریت کے تسلسل کے لیے تسلیم کیا جسکے لیے پارٹی قیادت اور کارکنوں نے بیشمار قربانیاں دی ہیں۔میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ الیکشن کمیشن کی رپورٹ کے پیش نظر اب پارٹی کے لیے اس موقف پر قائم رہنا مستقبل میں مشکل سے مشکل تر ہوتا چلا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں