Minorities delegation calls on Mian Manzoor Ahmed Wattoo‏

1796463_458978234239937_24423110760157462_n
A delegation of Christian hailing from Lahore, Gujranwala, Sialkot and Narowal called on Mian Manzoor Ahmed Wattoo, President Punjab PPP, here today to apprise him about the problems the community was facing in the respective regions.
They however appreciated the 5% quota reserved for the minorities in the government services by the PPP previous government that meant for their social upward mobility.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that the PPP considered the minorities as Party’s natural allies because of the progressive and liberal orientation of the political philosophy of the Party.
He added that the PPP declared the 11 August as the Minority Day each year according to then vision of the Quaid-e-Azam who declared that the citizens of Pakistan would enjoy equal rights regardless of their creed.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that the PPP previous government covered a lot of ground work to legislate for providing representation to the minorities in the Parliament in accordance with the population.
He further said that PPP reserved four seats for minorities in the Senate which was a leap forward for bringing them in the mainstream politics of the country.
He further said that it was the PPP government that decided to observe two religious functions of minorities officially each year.
Later, Mr. Abdul Qadir Shaheen, the newly appointed Co-coordinator, for minorities in Punjab, urged them that they should focus to organize at the district and Tehsil levels in view of the forthcoming local bodies’ elections.
Today’s meeting was organized by Suhail Milk, Senior Vice President PPP, Punjab.
In another meeting of PSF and the Youth Wing, Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that they should work for ensuring the maximum participation of them in the 18th October rally in Karachi.
They assured the PPP President that they were already on it and the level of participation of youth in the rally would please him.
The delegation appreciated the PPP governments for lifting the ban on student unions. Sohail Milk, Senior Vice President organized the meeting with PPP President, Punjab.

کرسچن کمیونٹی کے ایک وفد نے جنکا تعلق لاہور، سیالکوٹ اور نارووال اضلاع سے ہے، انہوں نے پنجاب پیپلز پارٹی کے صدر میاں منظور احمد وٹو سے یہاں آج ملاقات کی اور انکو اپنے مسائل کے بارے میں آگاہ کیا۔ انہوں نے پیپلز پارٹی کی پچھلی حکومت کے 5 فیصد کوٹہ اقلیتوں کے لیے سرکاری ملازمتوں میں مختص کرنے کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس سے اقلیتوں کی سماجی ترقی ہوئی۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی اقلیتوں کی فطری اتحادی ہے کیونکہ یہ پارٹی لبرل اور ترقی پسند سیاسی سوچ رکھتی ہے۔ انہوں نے یاد دلایا کہ پیپلز پارٹی کی پچھلی حکومت نے 11 اگست کو اقلیتوں کے دن کے طور پر منانے کا فیصلہ کیا اس دن کی خاص اہمیت یہ ہے کہ قائد اعظم محمد علی جناح نے 11 اگست کو کہا تھا کہ پاکستان میں تمام شہریوں کو بلا امتیاز مساوی حقوق حاصل ہونگے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی کی پچھلی حکومت اقلیتوں کو پارلیمنٹ میں آبادی کی بنیاد پر انکو نمائندگی دینا چاہتی تھی جس پرکافی حدتک کام ہو چکا تھا۔ انہوں نے یاددلایا کہ پیپلز پارٹی کی حکومت نے سینیٹ میں اقلیتوں کے لیے4 نشستیں مخصوص کیںجو کہ ایک ایسا تاریخی فیصلہ تھا جسکی وجہ سے اقلیتوں کو قومی سیاسی دھارے میں لانے کے لیے بڑی مدد ملی۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ یہ کریڈٹ بھی پیپلز پارٹی کی پچھلی حکومت کو جاتا ہے جس نے اقلیتوں کے دو مذہبی تہواروں کو ہرسال سرکاری طور پر منانے کا فیصلہ کیا تھا ، بعد میں عبدالقادر شاہین جو کہ نئے اقلیتوں کے کو آرڈینیٹر تعینات کئے گئے ہیں انہوں نے خطاب کرتے ہوئے زور دیا کہ کرسچن برادری کو ضلعی اور تحصیل کی سطح پر اپنے آپکو منظم کرنا چاہیے تا کہ آئندہ ہونیوالے مقامی حکومتوں کے انتخابات میں اپنا موثر کردار ادا کر سکیں۔آج کے اجلاس کو سہیل ملک سینیئر وائس پریذیڈنٹ نے منظم کیا تھا۔ایک اور اجلاس میں پی ایس ایف اور یوتھ ونگ کے نمائندوں نے پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو سے ملاقات کی جسمیں انہوں نے بتایا کہ وہ کراچی میں 18 اکتوبر کے جلسے میں اپنی بھر پور شرکت کو یقینی بتائیں گے۔ اس موقع پر سہیل ملک بھی انکے ہمراہ تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں