Mian Manzoor Ahmed Wattoo underscores the importance of inter-faith harmony

Picture
Mian Manzoor Ahmed Wattoo, President Punjab PPP, underscored the importance of promoting inter-faith and inter- religious school of thoughts harmony on the occasion when a delegation of PPP Ulema Wing led by Maulana Yusuf Awan called on him here today.
He appreciated the efforts of ulemas for creating social resistance against the menace of extremism and terrorism as the proponents of these evils were hell bound to make the society as their hostage. He appreciated their role in containing the scourge as they stood up in large number to halt its proliferation.
He said that there was no place of such toxic ideology in our religion the essence of which was peace, harmony and tolerance. Islam is the religion of humanity because of its universal application, he observed
He stated that those who were shedding the blood of the innocent people in the name of religion were neither Muslim nor human beings and therefore deserved hell as their final abode, so pronounced by Mufti-i- Azam in his latest sermon on the occasion of Haj.
Mian Manzoor Ahmed wattoo said that the PPP hold ulema in high esteem and to look after their welfare Shaheed Zulfiqar Ali Bhutto created a new Ministry of Religious Affairs for the purpose . He also recalled other landmark contributions of the PPP founding father for the preservation and promotion of Islamic values.
Ulema in the meeting assured the Punjab PPP President that they would continue to play their pro-active role in presenting and projecting Islamic ethos in true perspective as it was their social and religious duty and they would execute it with religious zeal.
Those who wre present in the meeting were Maulan Muhammad Aslam, Maulana Dr. Muhammad Arshad, Mufti Muhammad Naveed, Allama Abdul Hameed, Allama Tanvir Hussain etc.

میاں منظور احمد وٹو صدر پیپلز پارٹی پنجاب نے آج یہاں پیپلز پارٹی کے علماء ونگ کے ایک وفد سے باتیں کرتے ہوئے بین المذاہب اور بین المثالق کے درمیان ہم آہنگی کی اہمیت پر زور دیا۔ پیپلز پارٹی کے علماء ونگ نے علامہ یوسف اعوان کی قیادت میں صدر پیپلز پارٹی میاں منظور احمد وٹو سے یہاں ملاقات کی ۔ میاں منظور احمد وٹو نے علماء کی دہشتگردی اور انتہاء پسندی کے خلاف رائے عامہ ہموار کرنے کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ انکی وجہ سے ہمارا معاشرہ ان لعنتوں سے کافی حد تک محفوظ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہشتگرد اور انتہاء پسند ہمارے معاشرے کو یرغمال بنا کر ہماری آزادی کو چھین لینا چاہتے تھے لیکن انکے عزائم ناکام ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے مذہب میں دہشتگردی اور انتہاء پسندی کی کوئی جگہ نہیں کیونکہ اسلام سلامتی، بھائی چارے اور رواداری کا ضابطہء حیات ہے۔ اسی وجہ سے اسلام کو انسانیت کا مذہب کہا جاتا ہے۔میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ دہشتگرد اور انتہاء پسند جن معصوم لوگوں کا خون کر رہے ہیں انکی آخری منزل مفتی اعظم کے حالیہ خطبے کے مطابق جہنم ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی علماء کا بڑا احترام کرتی ہے۔ انہوں نے یاددلایا کہ پیپلز پارٹی کے بانی شہید ذوالفقار علی بھٹو نے علماء کی فلاح و بہبود کے لیے وفاقی سطح پر وزارت مذہبی امور بنائی تھی۔میاں منظور احمد وٹو نے اور کئی دوسرے تاریخی اقدامات کا ذکر کیا جو شہید ذوالفقار علی بھٹو نے اسلام کی سربلندی کے لیے کئے۔ وفد کے علماء نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ وہ دہشتگردی اور انتہاء پسندی کے خلاف اپنی دینی اور سماجی ذمہ داریوں کو ہر لحاظ سے پورا کریں گے۔ وفد میں مولانا محمد اسلم، مولانا ڈاکٹر محمد ارشد، مفتی محمد نوید، علامہ عبد الحمید، علامہ تنویر حسین وغیرہ وغیرہ شامل تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں