Mian Manzoor Ahmed Wattoo offers condolence to Muhammad Yasin's family

IMG_3895
Mian Manzoor Ahmed Wattoo, President Punjab PPP, went to the residence of late Muhammad Yasin here today to offer condolences on behalf of Chairman Bilawal Bhutto, Co- Chairman Asif Ali Zardari, the Party and on his behalf, who died in a heart attack while he was in the Party rally in Karachi on October18.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo prayed for the eternal peace for the deceased adding that his contributions for the Party would be long remembered.
While responding to a question put across by media, Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that there was no possibility of mid-term polls due to sit-in politics because the sole authority for holding such elections rest with the Prime Minister as per the constitution.
He recalled that the former President Asef Ali Zardari voluntarily delegated such powers to the Parliament which were recklessly used by the Ex-Presidents to sack the democratic governments despite their majority in the Parliament.
To another question, Mian Manzoor Ajhmed Wattoo said that he was not aware of the differences between PAT and Chaudhris of Gujrat. He , however mentioned that Chaudhary Shujat Hussain attended PAT meeting yesterday and Chaudhary Pervez Elahi met PAT leader today.
To yet another question, he said that he strongly believed in politics of decency and tolerance adding he totally disowned the news item circulated by a News Agency and published in a section of press in which he had been quoted as having used indecent language against the leaders of PTI. He said that the news item was totally baseless and indeed was the figment of the imagination.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that the Chairman Bilawal Bhutto would preside over the grand meeting of the PPP workers and office bearers at Bilawal House, Lahore, on November 30 in which constructive suggestions regarding the organization of the Party would be sought from them. The Chairman attaches highest importance to this aspect, he added.

پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو آج یہاں لاہور کے علاقے فتح گڑھ میں محمد یٰسین کے گھر تعزیت کے لیے گئے ۔ انہوں نے چیئرمین بلاول بھٹو، کوچیئرمین آصف علی زرداری، پیپلز پارٹی کے کارکنوں اور اپنی طرف سے سوگواران سے تعزیت کی اور کہا کہ پارٹی انکے خاندان سے مشاورت کے بعد انکی مدد کرے گی۔ یاد رہے کہ محمد یٰسین کراچی میں 18 اکتوبر کے جلسے میں دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گئے تھے۔ میاں منظور احمد وٹو نے اس موقع پر انکی پارٹی کی خدمات کو سراہتے ہوئے کہا کہ وہ ایک سچے اور مخلص کارکن تھے جنکی خدمات کافی عرصے تک یاد رکھی جائیں گی۔ انہوں نے انکے بلندی درجات کے لیے دعا کی۔ اس موقع پر میاں منظور احمد وٹو نے میڈیا سے باتیں کرتے ہوئے کہا کہ مڈٹرم انتخابات کروانے کا اختیار صرف وزیراعظم کے پاس ہے کیونکہ سابق صدر آصف علی زرداری نے یہ اختیار رضاکارانہ طور پر پارلیمنٹ کو دے دیا تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ سابق صدور نے اس اختیار کا جمہوری حکومتوں کے خلاف بڑی بے رحمی سے استعمال کیا تھا۔میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ دھرنوں کی وجہ سے مڈٹرم انتخابات کا انعقاد ہونا ممکن نہیں کیونکہ مڈٹرم انتخابات کروانے کا آئینی اختیار صرف وزیراعظم کے پاس ہے۔ ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ وہ پی اے ٹی اور چوہدری برادران کے درمیان اختلافات سے متعلق انکے پاس کوئی معلومات نہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ چوہدری پرویز الٰہی سے پاکستان عوامی تحریک کے قائد سے انکی آج ملاقات بھی ہوئی ہے اور چوہدری شجاعت حسین کل انکے جلسے میں بھی موجود تھے۔ میاں منظور احمد وٹو نے ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے ایک نیوز ایجنسی کی اس خبر کی سختی سے تردید کی جو آج بعض اخباروں میں چھپی ہے جسمیں ان سے منسوب پاکستان تحریک انصاف کے قائدین کے خلاف غیر مہذب اور غیر شائستہ زبان کا استعمال کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ سیاسی اختلافات کے ہوتے ہوئے بھی رواداری اور شائستگی پر پورا یقین رکھتے ہیں، اس لیے اس خبر سے انکا کوئی تعلق نہیں ہے جو کہ سراسر بے بنیاد اور من گھڑت ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ چےئرمین بلاول بھٹو پارٹی کے یوم تاسیس کے ضمن میں 30 نومبر کو بلاول ہاؤس لاہور میں ایک گرینڈ اجلاس کی صدارت کریں گے جسمیں وہ تنظیمی معاملات کے بارے میں پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں سے تجاویز لیں گے۔ انکے ہمراہ تعزیت کرنے افنان بٹ، میاں عبدالوحید اور عابد صدیقی تھے۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں