Governor Khosa,Manzoor Wattoo discuss political situation in Punjab and PPP poll strategy


The newly-appointed PPP Central Punjab President Mian Manzoor Ahmad Wattoo spent another busy day in the City on Wednesday, meeting with party leaders and discussing political matters.
At the meeting he held with PPP Lahore President Samina Khalid Ghurki at the latter’s DHA residence, Wattoo was briefed about the party’s state of affairs in Lahore and the level of its preparedness for the upcoming general elections.
Other office-bearers of the PPP Lahore Chapter were also part of the meeting that deliberated mainly on the names of prospective candidates that could be available to the party for the upcoming electoral contests in the City. As per sources, it was decided to discuss more names in the follow-up meetings to be held in the near future.
Talking to the media after the meeting, Wattoo castigated the Sharifs for their alleged involvement in stealing the PPP’s mandate in 1990 elections by accepting money from the ISI. He asked them to accept the verdict saying that statements of witnesses in the Asghar Khan case must be given due weightage.
Earlier, Wattoo also met with Punjab Governor Sardar Latif Khan Khosa at the Governor’s House. He was accompanied by PPP General Secretary Tanvir Ashraf Kaira.
Both the leaders expressed determination to practically implement the announcement made by President Asif Ali Zardari that the next Chief Minister of Punjab would be from PPP. Policy for stabilizing the party’s position in the province was also settled.
The leaders also discussed the upcoming possible scenario following the verdict of Supreme Court in Asghar Khan case.
Sources privy to the meeting said that the three had extensive discussion on how to galvanise the party in Punjab ahead of the upcoming elections. Legal aspects of the Asghar Khan case and its implications for the PPP also came under discussion, according to the sources.

گورنر پنجاب سردار لطیف خاں کھوسہ سے گزشتہ روزگورنر ہاؤس لاہور میں پاکستان پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کے نئے صدر میاں منظور احمد وٹو اور جنرل سیکرٹری تنویر اشر ف کائرہ نے ملاقات کی، ملاقات کے دوران ملک کی سیاسی صورت حال بالخصوص پنجاب کے معاملات زیر بحث لائے گئے اور صدر مملکت آصف رزدراری نے لاہور میں جو قوم سے وعدے کئے تھے خصوصاً پنجاب میں جیالا وزیراعلیٰ لانے کے وعدے کو عملی جامع پہنانے کا تہیہ کیا گیاجب کہ پیپلزپارٹی پنجاب کی تنظیم نے چیف الیکشن کمشنر کے اصغر خان کیس بارے بیان پر تشویش ظاہر کردی ۔ گورنر پنجاب لطیف کھوسہ ،صدر پیپلزپارٹی پنجاب میاں منظور احمد وٹو ،جنرل سیکرٹری تنویر اشرف کائرہ کے درمیان ہونے والی ملاقات میں پارٹی کو صوبے میں فعال بنانے پر تبادلہ خیال کیاگیا،ملاقات میں اصغر خان کیس میں سپریم کورٹ کا فیصلہ بھی زیر غورآیا۔گورنر پنجاب کاکہناتھاکہ شریف برادران کو اصغر خان کیس میں فیصلہ تسلیم کرکے اپنے عمل پر قوم سے معافی مانگنی چاہیے ۔ میاں منظور وٹونے کہاکہ دوسروں کو عدلیہ کے فیصلوں پر عمل کادرس دینے والوں کا اب خود امتحان ہے کہ وہ عدالتی فیصلے پر کس حدتک عمل کرتے ہیں۔تنویر اشرف کائرہ نے بتایاکہ پیپلزپارٹی پنجاب نے اصغر خان کیس میں چیف الیکشن کمشنر کے بیان پر تشویش ظاہر کی ہے اور کہاہے کہ الیکشن کمشنر کو سیاسی بیان بازی سے گریز کرنا چاہیے ۔ لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے منظور وٹو نے کہا کہ اصغر خان کیس میں عدالتی فیصلے پر عملدرآمد ہونا چاہئے ۔ انہوں نے کہا چیف الیکشن کمشنر پر اعتماد ہے ،امید ہے وہ منصفانہ انتخابات کرائیں گے ،نگران سیٹ اپ آنے سے قبل اصغر خان کیس پر کارروائی ہوجانی چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ تفصیلی فیصلے سے قبل چیف الیکشن کمشنر کو بات نہیں کرنی چاہیے تھی،پیپلز پارٹی عدالت عظمیٰ کے بے حد احترام کرتی ہے ،سپریم کورٹ نے الیکشن میں دھاندلی سے متعلق فیصلہ دیا ہے ۔ملاقات میں تنویراشرف کائرہ نے سردار لطیف کھوسہ کو کارکنوں کے مسائل سے بھی آگاہ کیا جس پر گورنر پنجاب نے وسطی پنجاب کے سیکرٹری جنرل کو یقین دلایا کہ کارکنوں کے جائز مسائل کو حل کرنے کیلئے ہرممکن کوشش کریں گے ۔ اس موقع پر انہوں نے تنویر اشرف کائرہ کو ہدایت کی کہ وہ آمدہ الیکشن کی بھرپور تیاری کریں تاکہ عام انتخابات میں مسلم لیگ (ن) کو پنجاب میں ٹف ٹائم دیا جاسکے ۔ دریں اثناءپیپلزپارٹی لاہور کی صدر وفاقی وزیرثمینہ خالد گھرکی کی رہائش گاہ پرمنعقدہ لاہورڈویژن کااجلاس ہوا جس میں پی پی پنجاب کے جنرل سیکرٹری تنویراشرف کائرہ اوروزیراعظم کے معاون خصوصی اسلم گل سمیت دیگر پارٹی رہنماﺅں نے شرکت کی ۔اجلاس میں پارٹی کی تنظیمی سرگرمیوں سمیت دیگر سیاسی امور پر تفصیلی بات چیت کی گئی ،اس موقع پر مادرجمہوریت محترمہ نصرت بھٹو کے ایصال ثواب کے لئے دعائے مغفرت کی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں