Mian Manzoor Wattoo condemns use of indecent language by Shaikh Rashid‏

218860_l
Mian Manzoor Ahmed Wattoo, President Punjab PPP, has condemned the use of indecent and foul language against the PPP leadership by Shaikh Rashid, Pakistan Awami League, in the public meetings of the PTI lately. PPP President Punjab mentioned this in his statement issued from the Party Secretariat here today.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo added if he did not stop then it would be difficult to control the PPP workers who would come out to take on him on his turf because they revered their leaders form the core of their hearts.
He pointed out that the PPP was not interested in heating up the political environment in the country for the sake of the continuity of the political system in the country and had been following the policy of reconciliation for the same reason.
Mian Manzoor Ahmed Wattoo hoped that Shaikh Rashid would act upon his advice to see sense in following the politics of tolerance, maturity and decency instead of politics reflective of the worst practices. Political opposition can be pursued on the basis of tolerance and decency, he added.
He pointed out that the politics of brinkmanship, allegations and counter-allegations had already hurt the image of the politicians to the hilt and now were the times to demonstrate measurable maturity and understanding of the large issues facing the country instead of pursuing the politics based on personal attacks.

پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے عوامی لیگ کے سربراہ شیخ رشید کی پاکستان تحریک انصاف کے جلسوں میں پیپلزپارٹی کی اعلیٰ قیادت کے خلاف غیر شائستہ زبان استعمال کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر انہوں نے یہ سلسلہ بند نہ کیا تو پیپلز پارٹی کے کارکن ان سے حساب چکانے کے لیے باہر نکل آئیں گے کیونکہ وہ پارٹی کی اعلیٰ قیادت کی عزت پر حرف نہیں آنے دیں گے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی ملک میں جمہوریت کے تسلسل اور فروغ کی خاطر سیاسی ماحول کو خراب نہیں کرنا چاہتی اس لیے وہ مفاہمت کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے امید ظاہر کی کہ شیخ رشید انکے مشوروں پر عمل کرتے ہوئے آئندہ سیاست میں رواداری اورشائستگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنے رویے میں مثبت تبدیلی لائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی مخالفت رواداری اور شائستگی سے بھی کی جاسکتی ہے۔میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ محاذ آرائی کی سیاست نے سیاستدانوں کے امیج کو ماضی میں بڑا خراب کیا ہے اور ہمیں اس قسم کی سیاست سے اجتناب کرتے ہوئے ملکی مسائل کے حل پر توجہ دینی چاہیے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ملکی حالات سنجیدہ سیاست اور سنجیدہ سیاست دانوں کی متقاضی ہیں۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں