منظور وٹو سیاسی یونیورسٹی کا درجہ رکھتے ہیں: سردار حق نواز ڈوگر

پاکستان پیپلز پارٹی حجرہ شاہ مقیم کے راہنما سردار حق نواز ڈوگر نے کہا ہے کہ منظور وٹو کی صدارت نے مقامی ’’سیا سی طالب علموں‘‘ کو حواس باختہ کر دیا ہے،منظور وٹو سیاسی یونیورسٹی کا درجہ رکھتے ہیں انکی سیاسی بصیرت کا اندازہ لگانا بھی حجرہ شاہ مقیم کی سیاست کے بس کی بات نہیں،انہوں نے ہمیشہ ملکی سطح کی اعلیٰ ترین سیاسی صفوں میں اپنا بہترین مقام کر حلقہ این اے 146کے عوام کا نام روشن کیا ہے جس پر ہمیں فخر ہے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مقامی ایم پی اے رضا گیلانی کے اس بیان پر کہ ’’منظور وٹو صدارت پکی کرنے کے چکر میں حواس باختہ ہوچکے ہیں‘‘پر بات کرتے ہوئے کیا ،انہوں نے کہا کہ یہ حقیقت روز روشن کی طرح عیاں ہے کہ گزشتہ الیکشن میں رضا گیلانی کو اپنی سیٹ بچانا مشکل ہو گئی تھی اور انکا گروپ این اے 146کا ٹکٹ جیت کی مہر لگا کر امیدوار کو دیتا تھا جو کہ گزشتہ الیکشن میں میاں منظور وٹو کو بھاری لیڈ سے کامیاب کر کے حلقہ کے عوام نے نہ صرف ریکارڈ توڑ دیا بلکہ باشعور ہونے کا بھی ثبوت فراہم کیا ،انہوں نے کہا کہ اپنے اردگرد خالی کرسیاں دیکھ کر رضا گیلانی’’ بقلم خود‘‘ حواس باختہ ہو کر رہ گئے ہیںآئندہ انتخابات میں حلقہ پی پی 187کی سیٹ پر جیالا ایم پی اے ہو گا،سردار حق نواز ڈوگر نے حجرہ شاہ مقیم میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میاں منظور احمد خاں وٹو کی زیر صدارت پیپلز پارٹی کے کارکن اب مزید متحرک ہو گئے ہیں کیونکہ پیپلز پارٹی ایک نظریے کا نام اور جیالوں کی پارٹی ہے ،صدر زرداری اور میاں منظور وٹو نے جیلیں کاٹیں لیکن میاں شریف برادران کی طرح ملک کو آمر کے رحم و کر م پر چھوڑ کر وطن عزیز سے راہ فرار اختیار نہیں کی یہی وجہ ہے کہ آج عوام نے پیپلز پارٹی کو بھرپور پزیرائی بخشی اور ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ جمہوریت نے اپنا دور مکمل کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں