PPP Punjab executive committee condemns two abhorrent incidents

10641099_699044366869054_8235107922473006488_n
Executive Committee Punjab PPP that met here today under the chair of Mian Manzoor Ahmed Wattoo passed two resolutions condemning in the strongest terms the bomb blast at Wagha border and the burning alive of two members of the Christian community in Kasur.
In the resolutions, it was resolved that the terrorist would not succeed in weakening the resolve of the Pakistani nation to defeat the menace of terrorism in Pakistan. The resolution further stated that the PPP appreciated the successes of the Pakistan Army against terrorists, and PPP was standing firmly behind the Army to eliminate terrorists from the country.
In the resolution the services extended by the Gurkhi hospital for providing prompt and excellent medical facilities to the bomb blast injured persons were highly appreciated. The services of other hospitals were also recognized by the Committee.
In another resolution, the Executive Committee abhorred the incident of Kasur where a couple belonging to the Christian community was burnt alive. The resolution stated that the incident had brought heap of ignominy for Pakistan in the international community.
The resolution expressed the PPP resolve to protect the life and property of the minorities because they were the equal citizens of Pakistan.
The resolution expressed the resolve of the Party to help the victim family by extending legal services and the necessary action in this regard was already underway. The resolution also said that financial assistance will also be extended,
In the meeting various proposals were discussed in connection with the observance of Youm-i- Tassees of the PPP on November 30, 2014 when Chairman Bilawal Bhutto will be here to meet the Party rank and file.
While talking to media after the meeting, Mian Manzoor Ahmed Wattoo said that the PPP was ready to contest the mid-term polls because the PPP was the biggest political force in the country. He expressed his confidence that the PPP would fair well in such elections those were fair, free and impartial.
While answering another question, he said that scores of the PTI MNAs did not want to resign and their conduct was mature that would move the political system in the right direction.
He pointed out that the PTI had decided to resign from the National Assembly and other provincial assemblies except KPK Assembly. It is the manifestation of double standard, he observed.
He further said that the PPP was not supporting the government but democracy for which the PPP had rendered countless sacrifices. For democracy, there is zero tolerance, he added.
The meeting was attended by Tanvir Ashrak Kaira, Samina Gurkhi, Raja Amir Khan, Raja Raiz, Mushtaq Awan,Aziz-ur- Rehman Chan,Dr. Ashiq Firdous Awan, Ghulam Farid Kathia,Dewan Mohyuddin, Suhail Milk, Mian Abdul Waheed, Main Ayub, Chaudhry Manzoor,Abdul Qadir Shaheedn etc.

پیپلز پارٹی پنجاب کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس آج یہاں میاں منظور احمد وٹو کی صدارت میں ہوا جسمیں دو قراردادیں متفقہ طور پر پاس کی گئیں جن میں واہگہ بارڈر پر دہشتگردی اور قصور میں مسیحی برادری کے دو ممبران کو زندہ جلانے کے واقعات کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کی گئی۔ قرارداد میں کہا گیا کہ پاکستانی قوم کے عزم کے سامنے دہشتگرد شکست فاش سے بچ نہیں سکیں گے۔ قرارداد میں پاکستان پیپلز پارٹی نے دہشتگردوں کے خلاف پاک فوج کی کامیابیوں کو سراہا اور کہا کہ پارٹی اس ضمن میں فوج کے ساتھ کھڑی ہے۔ قرارداد میں گھرکی ہسپتال کی سانحہ واہگہ بارڈر کے زخمیوں کو بروقت اعلیٰ طبی سہولتیں فراہم کرنے کو بھی سراہا گیا۔ دوسرے ہسپتالوں کی خدمات کا بھی اعتراف کیا گیا۔ دوسری قرارداد میں قصور کے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا گیا کہ اس سے تمام پاکستانیوں کے سر شرم سے جھک گئے ہیں اور دنیا میں پاکستان کے امیج کو شدید نقصان پہنچاہے۔ قرارداد میں پاکستان پیپلز پارٹی کے مکمل یقین کا اظہار کیا گیا اور اقلیتوں کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کیا اور کہا کہ پارٹی انکو برابری کے حقوق کے حصول کے لیے انکے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔ قرارداد میں کہا گیا کہ پارٹی سوگوار خاندان کی بھرپور مالی اور قانونی مدد کرے گی۔ ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس میں 30 نومبر کو یوم تاسیس کے حوالے سے مختلف تجاویز پیش کی گئیں۔ یادر ہے کہ اس دن چےئرمین بلاول بھٹو لاہور میں یوم تاسیس کی تقریبات میں بطور چےئرمین موجود ہونگے اور پارٹی کے عہدیداروں اور کارکنوں سے ملاقات کریں گے۔ میڈیا سے باتیں کرتے ہوئے میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی مڈٹرم انتخابات لڑنے کے لیے تیار ہے اور وہ آئندہ کے آزاد، شفاف اور غیر جانبدارانہ انتخابات میں بھرپور کامیابی حاصل کرے گی۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی پاکستان کی سب سے بڑی سیاسی جماعت ہے۔ ایک اور سوال کے جواب میں میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ انکے علم میں ہے کہ تحریک انصاف کے کئی ایم این اے استعفیٰ نہیں دینا چاہتے جو کہ ملک کے سیاسی نظام کے تسلسل کے لیے بہتر ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پی ٹی آئی قومی اسمبلی اور کچھ صوبائی اسمبلیوں سے استعفیٰ دینا چاہتی ہے لیکن کے پی کے میں ایسا نہیں کرنا چاہتی جو کہ دوہرے معیار کا مظہر ہے۔میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی موجودہ حکومت کی حمایت نہیں کر رہی وہ تو صرف جمہوریت کے ساتھ کھڑی ہے اور کھڑی رہے گی، کیونکہ جمہوریت پر پیپلزپارٹی کا غیر متزلزل ایمان ہے۔ اجلاس میں تنویر اشرف کائرہ، ثمینہ خالد گھرکی، راجہ ریاض، مشتاق اعوان، عزیزالرحمن چن، ڈاکٹر عاشق فردوس اعوان، غلام فرید کاٹھیا، دیوان محی الدین، سہیل ملک، میاں عبدالوحید، میاں ایوب، چوہدری منظور، عبدالقادر شاہین، چوہدری اسلم گل، ڈاکٹر خیام وغیرہ وغیرہ شامل تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں