اصغر خان کیس کی ایف آئی اے سے تحقیقات کے معاملہ پر (ن) لیگ پہلے اپنے گھر کو ٹھیک کرلے: کائرہ

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ اصغر خان کیس کی ایف آئی اے سے تحقیقات کے معاملہ پر (ن) لیگ پہلے اپنے گھر کو ٹھیک کرلے ،
اگرانہیں رائے ونڈکے تھانے دار سے تحقیقات بھی قبول نہیں تو نارووال کے تھانے دار سے کروا لیں،سپریم کورٹ کی رپورٹنگ میں احتیاط کی ضرورت ہے ،عدالت کبھی نہیں کہہ سکتی کہ وزیر اعظم اور وزراءآتے جاتے رہتے ہیں ،عدالت کے پاس پارلیمان کا دیا اختیار ہے ،عدالت نے مقدمات اوروزراءنے ملک کے فیصلے کرنے ہوتے ہیں،حالات 2008ءسے بہت بہتر ہیں ،غیر ملکیوں کے لئے ٹریولنگ ایڈوائس پہلے کی طرح اب جاری نہیں ہوتی،اسلم بیگ پرانے خواب دیکھنا چھوڑ دیں،عوام سپاہ کے جرنیلوں کا احترام کرتے ہیں۔منگل کو پارلیمنٹ ہاؤ س کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سپریم کورٹ میں بہت سارے کیسز چل رہے ہیں ،عدالتی رپورٹنگ میں اختیاط کی ضرورت ہے ۔آرڈر کی پراپر رپورٹنگ ہونی چاہیے ۔رپورٹنگ کی غلطی سے تاثر بدل جاتاہے ۔ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ میاں صاحب کو ایف آئی اے سے تحقیقات قبول ہیں مگر چوہدری نثار کو قبول نہیں احسن اقبال بھی غصے میں ہیں پہلے اپنے گھر میں تو فیصلہ کرلیں کہ ایف آئی اے کے بعد رائے ونڈ تھانے دار ٹھیک نہیں تو نارووال کے تھانے دار سے تحقیقات کروالیں۔انہوں نے کہاکہ جمہوریت کا مستقبل روشن ہے فرد کے کہنے سے کچھ نہیں ہوتا ایسی باتیں بہت عرصے سے کچھ افراد کرتے رہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں