Mian Manzoor Wattoo demands announcement of Provincial Finance Commission Award outlining funds for districts

DSC_0539

LAHORE, Nov 25 (INP): Mian Manzoor Ahmed Wattoo, President Punjab PPP, has urged the necessity of announcing Provincial Finance Commission Award on the analogy of National Finance Commission Award, outlining the distribution and utilization of development funds among the districts of the province of Punjab. He underscored the importance of this arrangement to meet the imperatives of equitable development of all the regions of the province. He said this after meeting the former Governor Punjab, Makhdoom Ahmed Mahmood here Tuesday. He further said that such mechanism would ensure equitable distribution of financial resources among the districts of the province. It will result in bringing the less developed districts at par with the developed districts of the province mitigating the economic deprivation of the people living there. He pointed out that the previous PPP Government announced 7th National Finance Commission Award through consensus with the aim of granting financial autonomy to the provinces as an instrument to strengthen the federation by addressing the economic problems of the people of the provinces. He observed that the present wave of rejection of the Government led by PML (N) was mainly due to the unfair distribution of financial resources among the districts. Few mega projects in the big cities of the Punjab province have eaten away the share of financial resources of the far flung areas of the province, he stated. He pointed out that depleting roads, miserable education and health facilities, disappearing of the farm to market roads and worsening civic amenities in the province were due to the flawed development strategy followed by lack of financial resources. He said that he was not opposed to the development of the big cities but it must not be at the cost of the less developed regions adding such discrimination also fueled urban rural tension contrary to process of integration of the population in the province. Mian Manzoor Ahmed Wattoo called upon that the proposed allocated funds through the Provincial Finance Commission Award should be utilized through the respective district governments without the unnecessary interference of the bureaucracy. He recalled that the Punjab Government had transferred billions of rupees of the local bodies’ funds in the past to fund the Lahore Metro Project and the Auditor General had not reconciled such expenditures as such as valid charge.
پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے آج یہاں سابق گورنر پنجاب مخدوم احمد محمود سے ملاقات کی۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کی صوبائی حکومت قومی مالیاتی ایوارڈ کی طرح کا صوبائی مالیاتی ایوارڈ کا اعلان کرے جسمیں تمام اضلاع کے لیے ترقیاتی فنڈز مختص کئے جائیں اور ایسے ترقیاتی فنڈز صرف انہی ضلعوں میں خرچ ہوں جنکے لیے مختص کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سے کم ترقی والے اضلاع کو ترقی یافتہ اضلاع کے برابر لایا جا سکتا ہے۔ انہوں نے یاد دلایا کہ پیپلز پارٹی کی پچھلی حکومت نے ملک میں ساتواں مالیاتی ایوارڈ متفقہ طور پر لائی تھی جسکے تحت صوبوں کو اضافی مالی وسائل حاصل ہوئے ، انکو مالیاتی خودمختاری ملی، جس سے وفاق مضبوط ہوا۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ ملک میں موجودہ حکومت کے خلاف لہر اس لیے چل رہی ہے کیونکہ مختلف ضلعوں اور علاقوں کے درمیان مالی ذرائع کی تقسیم غیر منصفانہ ہونے کی وجہ سے ترقی بھی غیر منصفانہ ہو رہی ہے جس سے کم ترقی یافتہ ضلعوں میں رہنے والے لوگ معاشی محرومی کا شکار ہیں۔ انہوں نے کہاکہ زیادہ تر صوبے کی سڑکیں نا گفتہ بے ہیں، اسکے علاوہ تعلیم اور صحت کے شعبوں کا بھی برا حال ہے۔ فارم سے مارکیٹ تک کی سڑکیں غائب ہیں، جس سے کسان کی آمدنی بری طرح متاثر ہو رہی ہے۔ غیر منصفانہ ترقی کی وجہ سے شہری اور دیہاتی آبادی میں فاصلے بڑھ رہے ہیں۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ صوبائی مالیاتی کمیشن ایوارڈکے ذریعے ضلعوں کو مالیاتی وسائل صرف اور صرف ضلعی حکومتیں خرچ کرنے کی مجاز ہوں اور اس میں صوبے کی نوکر شاہی بلا جواز مداخلت نہ کرے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ وہ بڑے شہروں کی ترقی کے خلاف نہیں ہیں لیکن ایسی ترقی باقی ضلعوں کی قیمت پر نہیں ہونی چاہیے۔ انہوں نے یاددلایا کہ موجودہ پنجاب کی حکومت نے اربوں روپے کے مقامی حکومتوں کے فنڈز لاہور میٹروبس کے منصوبے کے لیے ٹرانسفر کئے جو سراسر دوسرے علاقوں کے ساتھ زیادتی تھی۔ ان اخراجات پر پاکستان کے آڈیٹر جنرل نے بھی اعتراضات اٹھائے تھے۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں