Govt should avoid arresting PTI workers and allow peaceful protest: Tanvir Ashraf Kaira

1959417_460777864059974_3712935093294000977_n
Secretary General (SG) Pakistan Peoples Party (PPP) Punjab, Tanvir Ashraf Kaira has said that the government should give free hand to the PTI on November 30 like the last time and must not resort to use of force or pre-emptive detentions of the workers of the Party.
In a statement issued on Wednesday, Tanvir Ashraf Kaira also urged upon the PTI leadership not to insist on taking the procession to the Red Zone because that may provoke the protestors like the last time when they ransacked the PTV building state TV transmission were suspended temporarily. Protestors wielding staves regretfully also beat the law enforcement agencies officials that outraged the people in the country, he added.
Such untoward incidents when transmitted through TV screens would tarnish the image of the country in the eyes of the international community, he added.
He said that both the government and the PTI should behave in responsible manners adding the government should refrain from using the force and the PTI should assure the government that it would protest within the ambit of law and away from the D Chowk.
The PPP provincial SG also rejected the move of the government to proceed against PTI leader Mr. Jehangir Tareen that would further vitiate the political atmosphere of the country resulting in gripping the country in acute anxiety of uncertainty.
He said that the timing of such move would be described as sheer vendetta adding these were the times to show maturity and far- sightedness because negative politics would beget negative results.
Tanvir Ashraf reiterated that his party’s position was in favor of change in government through democratic means and not through the politics of sit-ins based on coercion and intimidation.
He expressed firm resolve of the PPP to defend and promote the democratic dispensation in the country because democracy was non-negotiable for the Party. He said that the PPP had played a decisive role in defending democracy in the country this time and would do so in future as well in case it was challenged again.

سیکرٹری جنرل پیپلز پارٹی پنجاب تنویر اشرف کائرہ نے حکومت سے کہا ہے کہ وہ پاکستان تحریک انصاف کے 30 نومبر کے جلسے سے پہلے انکے کارکنوں کی گرفتاریاں کرنے سے اجتناب کرے اور پہلے کی طرح پرامن احتجاج کرنے دے۔یہ بات انہوں نے آج یہا ں سے جاری ایک بیان میں کہی۔انہوں نے پاکستان تحریک انصاف کے قائدین سے بھی کہا کہ وہ بھی قانون کے اندر رہتے ہوئے اپنا احتجاج کریں اور ریڈ زون میں داخل نہ ہوں کیونکہ پچھلی دفعہ بھی احتجاج کرنے والے پاکستان ٹیلی ویثرن کی عمارت میں داخل ہو گئے تھے اور انہوں نے توڑ پھوڑ کی اور کچھ دیر کے لیے سٹیٹ ٹیلی ویثرن کی نشریات معطل کر دی گئی تھیں۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ اسوقت ڈنڈا بردار مظاہرین نے قانون نافذ کرنیوالے اداروں کے افسروں کو تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس قسم کے مناظر جب دنیا ٹی وی سکرین پر دیکھتی ہے تو پاکستان کی بڑی جگ ہنسائی ہوتی ہے۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ حکومت اور پاکستان تحریک انصاف دونوں کو قانون کا دامن نہیں چھوڑنا چاہیے اور قانون کے اندر رہتے ہوئے طاقت کا استعمال یا احتجاج کرنا چاہیے۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کے لیڈر جہانگیر ترین کے خلاف اسوقت حکومت کی طرف سے چاراجوئی انتقامی فعل کے تاثر کو تقویت دیتی ہے جس سے ملک میں سیاسی حالات میں بہتری کی بجائے ابتری کے زیادہ امکانات پیدا ہونگے۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ پیپلز پارٹی جمہوری طریقوں سے سیاسی تبدیلی کی حمایت کرتی ہے اور کسی ایسی تبدیلی کے حق میں نہیں جو دھرنوں کے ذریعے عمل میں لائی جائے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی جمہوریت کے دفاع اور اسکے فروغ کے لیے ہمیشہ جدوجہد کرتی رہے گی کیونکہ پارٹی کے نزدیک جمہوریت پر کوئی سودے بازی نہیں ہو سکتی۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے موجودہ سیاسی بحران میں جمہوریت کو بچانے کے لیے فیصلہ کن کردار ادا کیا ہے۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں