ایسا معلوم ہوتا ہے کہ حکومت اور پی ٹی آئی کے درمیان معاملات طے پا گئے ہیں: میاں منظور احمد وٹو

1796463_458978234239937_24423110760157462_n
PPP Punjab president Manzoor Wattoo said if both the government and the PTI were finding it hard to reach an understanding on terms of reference with regard to constitution of judicial commission they should better consult senators Aitzaz Ahsan and Raza Rabbani.
Mr Wattoo hoped the judiciary could help resolve the crisis.

پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے آج یہاں سے جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ حکومت اور پی ٹی آئی کے درمیان معاملات طے پا گئے ہیں اور اب دونوں پارٹیاں اسوقت پوائنٹ سکورنگ میں مصروف ہیں تاکہ وہ مذاکرات سے پہلے اپنی اپنی مذاکراتی پوزیشن مضبوط کرسکیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایسے ہی ہے کہ جیسا کہ دو ملک جنگ کے بعد جب وہ فائر بندی کرتے ہیں تو اس سے پہلے وہ اپنی اپنی پوزیشن مضبوط کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ اگر دونوں جماعتیں سپریم جوڈیشل کمیشن کے ٹی او آر(TOR) پر متفق نہیں ہوتیں تو یہ بات ثابت ہو جائے گی کہ دونوں جماعتیں (پی ایم ایل این اور پی ٹی آئی) تدبر اور معاملات کو احسن طریقے سے حل کرنے سے عاری ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس صورتحال میں وہ پیپلز پارٹی کے پاس آئیں جنکے پاس اعتزاز احسن اور رضا ربانی جیسے آئینی ماہر ہیں جو ان کو ٹی او آر بنا دیں گے۔ میاں منظور احمد وٹو نے امید ظاہر کی کہ عدالت عظمی قوم کو اس عذاب سے نجات دلانے میں کامیاب ہو جائے گی جو ان جماعتوں کی وجہ سے کئی مہینوں سے مبتلا ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے آج لاہور میں پی ٹی آئی کے احتجاج پر اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے اپنے کارکنوں کو ہدایات دی تھیں کہ وہ احتجاج کرنیوالوں کے سامنے نہ آئیں یہ ایک اچھا فیصلہ تھا جسکی وجہ سے احتجاج کافی حد تک پرامن رہا۔ انہوں نے یاد دلایا کہ اگر اس سال جون میں ماڈل ٹاؤن ،لاہور اور اسکے بعد اسلام آباد اور فیصل آباد میں بھی محاذ آرائی حکومت نہ کرتی تو اتنے لوگ جاں بحق نہ ہوتے اور ملک کا سیاسی ماحول بھی اس قدر سنگین نہ ہوتا۔ انہوں نے آج کے احتجاج میں کچھ قیمتی جانوں کے ضیاع پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا کہ اگرچہ اسکی ذمہ داری براہ راست پی ٹی آئی پر نہیں ڈالی جا سکتی لیکن یہ بھی حقیقت ہے کہ احتجاج کی وجہ سے ایمبولینسز ہسپتال نہ پہنچ سکیں جسکی وجہ سے قیمتی جانیں ضائع ہوئیں۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں