آصف علی زرداری نے سپیڈی ٹرائل کورٹس کے قیام کے ضمن میں مشروط حمایت کی ہے: میاں منظور احمد وٹو

peshawar-massacre-and-bb-s-murder-are-alike-1419716423-3144

پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے یہاں سے آج جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ سابق صدر آصف علی زرداری کے کل کے اعلان کے بعد ان حلقوں کے خدشات دور ہو جانے چاہئیں جو کہ سپیڈی ٹرائل کورٹس کے قائم کئے جانے پر ظاہر کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کو چیئرمین نے گڑھی خدابخش میں محترمہ بے نظیر بھٹو کے یوم شہادت کے موقع پر کل کہا تھا کہ ایسی عدالتیں صرف اور صرف دہشتگردی کے مقدمات پر فیصلے کیا کریں گی۔ اسکے علاوہ ان میں کسی سیاسی کارکن یا عام شہری کے خلاف مقدمات دائر نہیں کئے جائیں گے اور نہ ہی یہ عدالتیں ایسے مقدمات پر فیصلے صادر کرنے کی مجاز ہونگی۔ صدر پیپلز پارٹی پنجاب نے مزید کہا کہ کو چیئرمین نے ان عدالتوں کے قیام کے ضمن میں مشروط حمایت کی ہے اگر محسوس کیا گیا کہ یہ عدالتیں اپنے مینڈیٹ سے ہٹ کر کام کررہی ہیں تو پیپلز پارٹی انکی حمایت کرنے یا نہ کرنے پر دوبارہ غور کر سکتی ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے کہا کہ دہشتگردی کی لعنت کو جڑ سے اکھاڑنے کے لیے قومی قیادت نے یہ کڑوی گولی نگلی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ قومی سیاسی قیادت بھی ان عدالتوں کو انتقامی کارروائیوں کا پلیٹ فارم نہیں بننے دے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی اس ضمن میں ایک واضح موقف رکھتی ہے۔ میاں منظور احمد وٹو نے پیپلز پارٹی پنجاب کے کارکنوں کو محترمہ بے نظیر بھٹو کا یوم شہادت انتہائی عقیدت و احترام سے منانے پر انکو سلام پیش کیا ہے اور کہا ہے کہ اس سال صوبے کے تمام اضلاع میں یوم شہادت پر پشاور کے شہداء کے لیے دعائے مغفرت کرنے کے علاوہ شمعیں بھی روشن کی گئیں جو کہ انکے ساتھ اظہار یکجہتی کا مظہر تھا۔انہوں نے کہا کہ ان تقریبات میں بڑی تعداد میں کارکنوں، عہدیداروں، عورتوں، بچوں، اور اقلتیوں کے نمائندوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

کیٹاگری میں : News

اپنا تبصرہ بھیجیں